آئینۂ عالمتازہ ترین خبریں

میسیڈونيا کے نام بدلنے کے فیصلے کا امریکہ خیر مقدم کرتا ہے: پومپو

امریکہ نے میسیڈونيا کے ’شمالی میسیڈونيا جمہوریہ‘ نام رکھنے کے لئے آئین میں ترمیم کے حق میں ووٹ دینے کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔ امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پومپو نے ہفتہ یہ اطلاع دی۔

میسیڈونيا کی پارلیمنٹ میں جمعہ کو اکثریت نے ملک کے نام تبدیل کرنے سے متعلق ایک آئینی ترمیم کے حق میں ووٹ دیا، اس کا نام اسكوپجے اور یونان کے درمیان گذشتہ جون میں ایک معاہدے پر اتفاق کے بعد تبدیل کر دیا تھا۔ میسیڈونيا کے صدر جارج ایوانوف نے کہا کہ وہ اس قدم کو قبول نہیں کریں گے لیکن وزیر اعظم زوران جائیف نے کہا کہ اس فیصلے کو صدر کی منظوری کی ضرورت نہیں تھی۔

مسٹر پومپيو نے ایک بیان میں کہا کہ امریکہ میسیڈونيا کی پارلیمنٹ کی جانب سے یونان کے ساتھ پریسپا معاہدے کو منظوری دینے کے لئے ضروری آئینی ترامیم کرنےکے فیصلے کا خیر مقدم کرتا ہے۔ وزیر خارجہ نے یونان کے ساتھ طویل عرصے سے جاری تنازع کے حل کے لئے میسیڈونيا کے رہنماؤں کے ’نظریئے، جرات اور ہمت‘ کی تعریف کی۔ نام کی تبدیلی سے یونان کے ساتھ میسیڈونيا کا تقریباً 30 برس سے جاری تنازعہ ختم ہو جائے گا، اس کے سبب میسیڈونيا نیٹو اور یورپی یونین میں شامل ہونے سے محروم تھا۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close