بہار- جھارکھنڈتازہ ترین خبریں

مہاگٹھ بندھن کے اجلاس سے آر جے ڈی اور کانگریس نے بنائی دوری

بہار میں اس سال ہونے والے اسمبلی انتخاب کے قبل مہا گٹھ بندھن کی حلیف جماعتوں کی سماجی لیڈر اور سابق مرکزی وزیر شرد یادو کی قیادت میں آج ہوئے اجلاس سے کانگریس اور راشٹریہ جنتادل (آر جے ڈی) نے دوری بنا لی ہے۔

لوک تانترک جنتادل کے قومی سرپرست شرد یادو کی قیادت میںیہاں مہاگٹھ بندھن کی حلیف جماعتوں کی میٹنگ ہوئی۔ اس اجلاس میں راشٹریہ لوک سمتا پارٹی (آر ایل ایس پی) کے قومی صدر اور سابق مرکزی وزیر اپندر کشواہا، ہندوستانی عوام مورچہ کے قومی صدر اور سابق وزیراعلیٰ جیتن رام مانجھی اور ویکاس شیل انسان پارٹی (وی آئی پی) کے قومی صدر مکیش سہنی شامل ہوئے۔

سابق مرکزی وزیر مسٹر یادو کے ساتھ ہوئے اجلاس میں مہاگٹھ بندھن کے سبھی بڑے لیڈران نے آئندہ ہونے والے اسمبلی انتخاب کے سلسلے میں غورو خوض کیا لیکن اہم حلیف آرجے ڈی اور کانگریس کے کوئی بھی لیڈر شامل نہیں ہوئے۔ آر جے ڈی اور کانگریس لیڈران نے اس اجلاس سے دوری بنا لی ہے۔ وہیں لوک تانترک جنتادل کے ریاستی نائب صدر بینو یادو نے یہاں بتایاکہ اجلاس میں مہا گٹھ بندھن کی مضبوطی کیلئے حلیف جماعتوں کے بیچ تال میل کیلئے کوآرڈینیشن کمیٹی بنائے جانے پر خصوصی طور سے گفتگو کی گئی۔ انہوں نے بتایاکہ مسٹر یادو آر جے ڈی صدر لالو پرساد یادو سے ملنے کیلئے آج ہی رانچی کیلئے روانہ ہوگئے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل تیرہ فروری کو آرایل ایس پی صدر مسٹر کشواہا، ہم کے صدر مسٹر مانجھی اور وی آئی پی کے صدر مسٹر سہنی نے سماجوادی لیڈر شرد یادو سے یہاں ملاقات کی تھی۔ مہاگٹھ بندھن میں وزیراعلیٰ کا چہرہ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر تیجسوی پرساد یادو کو بنائے جانے پر ابھی تک عام اتفاق رائے نہیں بن سکا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close