بہار- جھارکھنڈتازہ ترین خبریں

مکامہ شیلٹر ہوم سے سات لڑکیاں فرار، مظفرپور سانحہ کی 5 متاثرہ بھی شامل

بہار کے پٹنہ ضلع میں مکامہ شیلٹر ہوم سے آج علی الصبح سات لڑکیاں فرار ہو گئیں۔ جن میں سے پانچ مظفر پور گرلس شیلٹر ہوم کی تھیں۔

ریاست کے ایڈیشنل ڈائریکٹرجنرل آف پولیس ( ہیڈکوارٹر ) کندن کرشنن نے یہاں بتایاکہ مکامہ شیلٹر ہوم سے سات لڑکیاں گریل کاٹ کر فرار ہوگئی ہیں۔ انہوں نے بتایاکہ اس شیلٹر ہوم کو عیسائی نن کے ذریعہ چلایا جا رہا ہے اور یہاں کسی باہری کا داخلہ پوری طرح سے ممنوع ہے۔ مسٹر کرشنن نے بتایا کہ فرار ہوئی بچیوں میں پانچ ویسی بچیاں بھی ہیں جنہیں مظفر پور گرلس شیلٹر ہوم کے بند ہونے کے بعد یہاں شفٹ کیا گیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ اس سلسلے میں گمشدگی کا ایک معاملہ مقامی تھانے میں درج کرا دیا گیا ہے۔

وہیں ذرائع نے بتایا کہ فرار لڑکیوں کی گرفتاری کیلئے پٹنہ ضلع کے سبھی سرحدوں کو سیل کر دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ ٹاٹا انسٹی چیوٹ آف سوشل سائنسز کے آڈٹ رپورٹ میں بچیوں کے ساتھ جنسی استحصال معاملے کا خلاصہ ہونے کے بعد مظفر پور گرلس شیلٹرہوم کو بند کر دیا گیا تھا۔ اس کے بعد یہاں کی بچیوں کو مقامہ شیلٹر ہوم میں شفٹ کر دیا گیا تھا۔

آپ کی جانکاری کے لئے بتا دیں کہ گزشتہ سال مظفرپور گرلز شیلٹر ہوم میں 34 لڑکیوں کے جنسی استحصال کا معاملہ سامنے آیا تھا۔ جس کے بعد صوبے سے لے کر ملک تک کی سیاست میں ایک ہلچل سی مچ گئی تھی۔ جس کے بعد شیلٹر ہوم چلانے والے برجیش ٹھاکر سمیت 19 لوگوں کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا گیا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close