تازہ ترین خبریںدلی نامہ

مودی جی آپ کے لئے راہل گاندھی اکیلے کافی ہیں

چاندنی چوک میں ضلع کانگریس کی جانب سے استقبالیہ تقریب میں جے پی اگروال کا خطاب

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
پارلیمانی انتخابات 2019 کے چھٹے مرحلے میں 12 مئی کو دہلی میں ہونے والے انتخابات کی سرگرمیاں شباب پر ہیں۔ جس میں کانگریس کی جانب سے مودی حکومت میں ہوئی نوٹ بندی جی ایس ٹی اور سیلنگ سمیت دیگر عوامی مسائل کو زور شور سے اٹھایا جا رہا ہے۔

چاندنی چوک لوک سبھا حلقہ سے ایک مرتبہ پھر کانگریس کے امیدوار بنے جے پرکاش اگروال نے مرکزی بی جے پی کو جم کر نشاتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی کو انتباہ دیا کہ مودی جی! آپ کےلئے راہل گاندھی اکیلے ہی کافی ہیں۔ آج پورے ہندوستان میں اپوزیشن کا کوئی لیڈر راہل گاندھی کے قد کو چھو بھی نہیں پا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج بی جے پی اپنے وعدوں کو بھول گئی ہے۔ بحث 15 لاکھ پر نہیں ہو رہی، فوجیوں کے سر کاٹنے، کارخانوں لگانے پر، فارین پالیسی بہتر ہونے پر یا نوجوانوں کی 2 کروڑ نوکریوں پر بات نہیں کی جا رہی ہے، بچے بے روز گار گھوم رہے ہیں، سرکاری نو کریاں ہیں مگر بھرتی نہیں کی جا رہی۔ بنیادی طور پر لوگوں کو تنگ کیا گیا، مودی کے فیصلے سے نوٹ بندی ہوئی جس سے معاشی تنگی ہوئی، جی ایس ٹی لگائی، جس نے تاجروں کے کاروبار پر چوٹ کی، سیلنگ کی گئی، لوگوں کے کارو بار بند ہو گئے لوگوں نے خود کشی کی۔ مگر ساتوں ارکان پارلیمنٹ کی آ واز تک نہیں نکلی۔ انہوں نے ڈاکٹر ہرش وردھن کو نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ چاندنی چوک کے رکن پارلیمنٹ اور مرکزی وزیر تھے مگر انہوں نے لوگوں کی آواز نہیں اٹھائی اور اپنے عیش و آرام کو بہتر سمجھتے ہوئے اپنی کرسی بچائی۔ انہوں نے عام آدمی پارٹی کو نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ ان کا حال ایسا ہی ہو گا جیسا آسام گن پریشد کا آسام میں ہوا تھا۔

سابق وزیر ہارون یوسف نے کہاکہ مرکز کی یا دہلی کی حکومت ہو اس نے صرف لوگوں کو ٹھگنے کا کام کیا ہے۔ جس طرح فرقہ پرستی بڑھی ہے، آج ہندوستان کے لوگ یہ سوچنے پر مجبور ہیں خواہ وہ کسی بھی مذہب یا ذات سے تعلق رکھتے ہوں، وہ سوچنے پر مجبور ہیں کہ اگر ملک میں مان امان نہیں ہوگا تو ترقی کیسی ہوگی۔ جس طرح کی زبان بی جے پی بول رہی ہے یہ ملک کی یکجہتی کےلئے بڑا خطرہ جس کےلئے پورے ملک کو اس کے خلاف کھڑا ہونا ہوگا۔

اس موقع پر سابق رکن اسمبلی پرہلاد سنگھ ساہنی، شعیب اقبال، راجیش جین، بھائی مہربان قریشی ضلع چاندنی چوک کے صدر محمد عثمان، کونسلر آل محمد اقبال، دہلی کانگریس کے سکریٹری محمد حامد خان، محمد طیب، شاہ فیصل، محمد اکبر، سابق کونسلر ضمیر احمد، سعیدہ بیگم، تبسم ناز، بیگم شاہ جہاں، نعیم الدین سلمانی، فیض محمد خان، عبید خان، حفیظ الحق، عباد الحق بادو بھائی، سیتا رام بازار کے سابق صدر حسنین اختر منصوری، محمد سبحان، محمد نسیم، جگموہن پردھان محمد خالد، رفیق وسمیت چاندنی چوک، بلیماران، صدر بازار، مٹیا محل اسمبلی حلقہ کے سیکڑوں کانگریسی کارکنان موجود تھے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close