اپنا دیشتازہ ترین خبریں

مودی۔نرملا کو معاشی صورت حال کا کوئی علم نہیں: کانگریس

کانگریس نے وزیراعظم نریندر مودی اور وزیرخزانہ نرملا سیتارمن پر یس بینک کی مالی صورت حال کو دیکھتے ہوئے براہ راست حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بینک ڈوب رہے ہیں اور لوگوں کو پنا پیسہ نکالنے میں پریشانی ہو رہی ہے لیکن یہ صورت حال کیوں پیدا ہورہی ہے اس کی انہیں کوئی جانکاری نہیں ہے۔

کانگریس ترجمان پون کھیڑا نے جمعہ کو یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں نامہ نگاروں کی کانفرنس میں کہا کہ مسٹر مودی پہلے وزیراعظم اور محترمہ سیتارمن پہلی وزیر خزانہ ہیں جو ملک کی معاشی صورت حال کے سلسلے میں لاعلم ہیں اور ’کلولیس‘ ہیں۔ مودی حکوموت کے پاس کسی طرح کا مالی انتظام نہیں ہے اور مودی۔نرملا کو یہ پتہ ہی نہیں ہے کہ معیشت کہاں جا رہی ہے۔ مودی حکومت نے نہ صرف معیشت کی کمر توڑ دی ہے بلکہ ملک کے عام آدمی کو دھوکہ دیا ہے اور اس کی زندگی مشکل ہوگئی ہے۔

مسٹر کھیڑا نے کہاکہ یس بینک کی صورت حال کے سلسلے میں حکومت کو ساری جانکاریاں تھیں اس کے باوجود کوئی اقدام نہیں کئے گئے اور ریزرو بینک کو بالآخر یس بینک کو اپنے قبضے میں لینا پڑا اور کھاتہ داروں کے لئے 50 ہزار روپے نکالنے کی حد مقرر کرنی پڑی۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت کو بتانا چاہئے کہ جب سب کچھ اس کے سامنے ہواہے تو یہ صورت حال کیوں پیدا ہوئی اور عام کھاتہ داروں کو بحران میں کیوں ڈالا گیا۔

کانگریس لیڈر نے بتایا کہ مودی حکومت کی بدانتظامی کی وجہ سے بینکوں کے سامنے لمبی قطاریں لگ رہی ہیں اور لوگوں کو اپنا ہی پیسہ نکالنے کے لئے پابندی جھیلنی پڑرہی ہے۔ تقریبا چھ ماہ پہلے مہاراشٹر میں لوگ اپنا پیسہ نکالنے کے لئے لمبی لائنوںمیں کھڑے رہے۔ انہوں نے بتایا کہ مودی حکومت کے آنے کے بعد بینکوں میں گھپلہ بازی میں اضافہ ہوگیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ 16۔2015 میں 18699 کروڑ، 17۔2016 میں 239335 اور 18۔2017 میں 41176 کروڑ روپے کا بینک گھپلہ ہواہے۔ سال 2019 سے اب تک ایک لاکھ 43 ہزار کروڑ روپے کا گھپلہ ہوچکا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close