اپنا دیشتازہ ترین خبریں

مودی۔شاہ کی حرکتوں سے ’ملک‘ کا اتحاد وہم آہنگی خطرے میں ہے: راج ٹھاکرے

مہاراشٹر نونرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے نے آج ایک بار پھر بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہاکہ بی جے پی کی اور اس کے لیڈروں مودی۔شاہ کی وجہ سے ملک کی جمہوریت کو شدید خطرہ ہے، اچل کرنجی میں ایک جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے راج نے مزید کہا کہ ملک کی تاریخ میں ایسا پہلی بار ہوا کہ سپریم کورٹ کے چار ججوں نے ایک پریس کانفرنس میں متنبہ کیا کہ ملک کی آزادی، جمہوریت اور مقننہ کو شدید خطرہ ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک ایک بار ان کے جھانسے میں پھنس گیا ہے، لیکن اب دوسری بار عوام کو ان کے جال میں پھنسنا نہیں ہے، ان کا کہنا تھاکہ بی جے پی کے پاس ان کے سوالات کے جواب نہیں ہیں۔ راج ٹھاکرے نے سپریم کورٹ کے ججوں کی پریس کانفرنس کے حوالے سے بی جے پی اور مودی۔امت شاہ کی جوڑی کو نشانہ بناتے ہوئے جج لویا کی پراسرار موت کا بھی ذکر کیا۔ انہوں نے اشارے میں اس کے لیے بی جے پی صدر امت شاہ کوذمہ دار قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ’’میں نے حال کے جسلوں میں بی جے پی کے سربراہوں مودی اور شاہ سے ملک کی موجودہ صورتحال پر متعدد سوالات کیے ہیں، لیکن ان کے پاس میرے سوالات کے جواب نہیں دیئے ہیں۔‘‘

ایم این ایس سرابرہ راج ٹھاکرے نے کہاکہ ریزروبینک کے دوگورنروں کو دباؤ میں لیا گیا اور انہیں عہدے سے ہاتھ دھونا پڑا، انہوں نے کہا کہ امت شاہ وزیراعظم مودی کے پٹھو ہیں۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close