اترپردیش

مقاصد کی تکمیل و روشن مستقبل کے لئے مقابلہ جاتی تعلیم کے حصول کو آسان بنانا وقت کی ضرورت: محبوب زیدی

امروہہ میں ہونہار طالبات کو مفت آئی اے ایس و آئی پی ایس مفت کوچنگ مرکز دینے کی تیاری ڈاکٹر سراج ہاشمی کی صدارت میں مفکرین کا سنجیدہ غور و فکر

امروہہ (سالار غازی) 
طلبہ و طالبات کے لئے مقابلہ جاتی تعلیم و تربیت مراکز کا اہتمام وقت کی اہم ترین ضرورتوں میں شمار ہو گیا ہے. موجودہ حالات کا تقاضہ ہے کہ ہم اپنے بچوں کو حصول تعلیم کے ساتھ ساتھ اہم ترین عھدوں کی اہمیت اور قوم کو ہونے والے اسکے فوائد سے روشناس کریں مذکورہ خیالات کا اظہار چیرمین ہاشمی ایجوکیشنل گروپ سرکردہ سماجی کارکن ڈاکٹر سراج الدین ہاشمی نے مفکرین تعلیم کے ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہویے کیا.

قابل ذکر ہے کہ امروہہ میں ہونہار طالبات کو مفت آئی اے ایس و آئی پی ایس سول سروسز و سی پی ایم ٹی تربیت مرکز کے قیام کو لیکر مفکرین کی ایک میٹنگ کا انعقاد شہر کے محلہ گزری میں مرحوم سید محفوظ الحسنین کی رہائش گاہ پر زیر صدارت ڈاکٹر سراج الدین ہاشمی کے ہوا. اس میٹنگ میں حاجی محبوب حسین زیدی حاجی خورشید انور سید ظہور مصطفیٰ نقوی حاجی اویس مصطفیٰ رضوی حارس عبّاس علی امام رضوی سید قمر نقوی جیسے مفکرین تعلیم و سماجی کارکنان نے امروہہ کی ہونہار طالبات کے لئے مفت تربیتی مرکز کھولے جانے کے مواقوں پر سنجیدہ غور و فکر کیا.

حاجی محبوب حسین زیدی نے کہا کہ تعلیم ہی ترقی کی ضمانت ہے لیکن حکمت عملی اور منصوبہ بندی کے ساتھ حاصل کی جانے والی تعلیم ہی مقاصد کی تکمیل اور قومی فلاح کا ذریعہ بنتی ہے لہٰذا آئی اے ایس آئی پی ایس و سی پی ایم ٹی و دیگر مقابلہ جاتی تعلیم کے حصول کو آسان بنانے کی نسبت سے جو غور و فکر کا آغاز ہوا ہے اسکو پورا کرنے کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی. حاجی اویس مصطفیٰ نے کہا کہ اس سلسلہ میں دہلی و دیگر شہروں کے مختلف ریٹایرڈ عھدہ داران سے رابطہ کیا جا رہا ہے.

حاجی خورشید انور نے کہا کہ تربیتی مرکز ہونہاروں کے لئے مفت ہوگا. جہاں حسب ضرورت طالبات کو تعلیمی ماحول فراہم کرنے کی مکمل کوشش کی جائے گی. حارس عبّاس نے بھی اپنے خطاب کے دوران مرکز کے قیام و اسکے فوائد پر روشنی ڈالی سید ظہور مصطفیٰ نقوی نے تمام حاضرین کا شکریہ ادا کیا.

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close