بہار- جھارکھنڈتازہ ترین خبریں

مظفر پور شیلٹر ہوم: سپریم کورٹ نے لگائی نتیش حکومت کو پھٹکار، تمام معاملات دہلی منتقل

سپریم کورٹ نے جمعرات کو بہار کے مظفرپور میں واقع طالبات شیلٹر ہوم جنسی زیادتی کے معاملے میں نتیش حکومت کی سرزنش کرتے ہوئے اس مقدمے کو دہلی منتقل کر دیا۔

سپریم کورٹ کے چیف جسٹس رنجن گوگوئی کی صدارت والی بنچ نے کہا، ’حد ہوتی ہے، حکومت کیسے چلا رہے ہیں؟ چیف سکریٹری کو عدالت میں حاضر ہونے کا حکم دیا جائے گا‘۔ عدالت نے کہا کہ یہ بد قسمتی ہے کہ بچیوں کے معاملے میں حکومت اس طرح کا برتاؤ کر رہی ہے۔

جسٹس گوگوئی نے کہا کہ یہ معاملہ بہار کے مظفر پور سے دہلی کے ساکیت میں واقع عدالت کو منتقل کیا جاتا ہے۔ اتنا ہی نہیں، عدالت نے اس معاملے کی سماعت چھ ماہ کے اندر مکمل کرنے کی ہدایت بھی دی ہے۔ جسٹس گوگوئی نے کہا، ’بہت ہو گیا۔ ہم بہار کے چیف سکریٹری (دیپک کمار) کو حکم دیتے ہیں کہ وہ عدالت میں پیش ہوں‘۔ جسٹس گوگوئی نے کہا،‘ یہاں (عدالت کے احاطے میں) کسی ایسے شخص کو بھیجا جائے، جسے معلوم ہو کہ ریاست میں کیا ہو رہا ہے؟ آپ اپنے افسران کو اس طرح سے پہلے سے ہی پریشان بچیوں کے ساتھ کھلواڑ کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ بچوں کو تو بخش دو!

عدالت نے دو ہفتے کے اندر مظفرپور کی عدالت میں مقدمے سے متعلق موجود تمام دستاویز دہلی کے ساکیت میں واقع چائلڈ سیکسول پروٹیکشن ایکٹ کی خصوصی عدالت کو سونپنے کی ہدایت دی۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close