اترپردیش

مظاہرین پر ظلم و تشدد سماج وادی پارٹی کی بڑھتی مقبولیت سے خائف ہونے کی دلیل: محبوب علی

جد و جہد سماج وادیوں کی تاریخ ہے بھاجپا کا خاتمہ قریب: پرویز علی...............سماج وادی پارٹی کے نو نامزد ضلع صدر کا ایم ایل اے امروہہ و ایم ایل سی مرادآباد بجنور نے کیا استقبال

امروہہ (سالار غازی) 
سماج وادی پارٹی کے نو نامزد ضلع صدر نرموج یادو نے پارٹی کے قدآور لیڈر اور ایم ایل اے امروہہ صدر پی اے سی اتر پردیش سابق کابینہ وزیر حاجی محبوب علی و رکن قانون ساز کونسل حلقہ مرادآباد بجنور نوجوان لیڈر سماج وادی پارٹی حاجی پرویز علی سے ملاقات کی.

ضلع صدر نامزد ہونے کے باد پہلی مرتبہ ایم ایل اے رہائش گاہ آزاد روڈ امروہہ پہنچے نرموج یادو کا حاجی محبوب علی و حاجی پرویز علی نے پرتپاک استقبال کیا اس دوران پارٹی کی علاقائی یونٹ کی نو تشکیل کے علاوہ موجودہ سیاسی حالات پر بھی سبھی لیڈران کے درمیان تبادلہ خیال ہوا اس موقع پر نو نامزد ضلع صدر نے کہا کہ سماج وادی پارٹی کی جانب سے جو اہم ترین ذمہ داری ان کو سپرد کی گئی ہے اس کو مکمل ایمان داری کے ساتھ پورا کرینگے اسکے علاوہ پارٹی پالیسیوں کا فروغ اور عوامی حقوق کی آواز بلند کرنا انکی ترجحات میں شامل رہیگا، انہوں نے کہا کہ ذمہ داری کے حصول میں پارٹی کے سینیر لیڈر حاجی محبوب علی کا مکمل تعاون انکے ساتھ رہا اسکے لئے محبوب علی و پرویز علی کے شکر گزار ہیں.

حاجی محبوب علی نے کہا کہ سماج وادی پارٹی کی جانب سے نرموج یادو کو ضلع صدر نامزد کر حلقہ میں پارٹی میں نوجوان طبقہ کی حصہ داری کی ضرورت کو سمجھتے ہوئے کی گئی ہے. انہوں نے کہا کہ آج ضرورت اس بات کی ہے کہ مرکزی و صوبائی حکومتوں کے خلاف نوجوان طبقہ زیادہ اثرانداز طریقے اور جوش و خروش کے ساتھ میدان عمل میں اترے، عوامی حقوق کی آواز بلند کرنے والوں کو صوبہ کی بھاجپا حکومت لاٹھی برسا کر حسب اقتلاف کی آواز کو دبا دینا چاہتی ہے.

انہوں نے کہا کہ جد و جہد سماج وادیوں کی تاریخ رہی ہے پارٹی کا ایک ایک سپاہی اپنے لیڈر اکھلیش یادو کی قیادت میں دو ہزار بائیس کی جنگ کے لئے تیار ہے ایم ایل سی حاجی پرویز علی نے بھی صوبائی و مرکزی حکومتوں پر حملہ بولا اور کہا کہ بھاجپا اقتدار کے نشہ میں مست ہے عوام پر مہنگائی کی مار اور تیل قیمتوں میں مسلسل ہوتا اضافہ و سرحدوں پر پڑوسی ملکوں کی دادا گیری سے ثابت ہو گیا ہے کہ بھاجپا قیادت والی بی جی پی حکومت داخلی و خارجی دونوں محاز پر ناکام ہو چکی ہے. اس موقع پر سماج وادی پارٹی کے بیشتر کارکنان موجود رہے.

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close