اپنا دیشتازہ ترین خبریں

مدھیہ پردیش کی سیاست میں نیا موڑ، سندھیا کے 6 حامی وزراء برخاست

مدھیہ پردیش میں جاری سیاسی بحران کے بیچ گورنر لال جی ٹنڈن نے وزیر اعلی کمل ناتھ کی سفارش پر 6 وزرا کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا۔ یہ وزیر کانگریس کے باغی 19 ارکان اسمبلی میں شامل ہیں جنہیں بنگلورو سے بھو پال واپس لوٹنا تھا پر اپنی سیکیورٹی کی فکر کرتے ہوئے وہ واپس بنگلورو ایئر پورٹ سے ہوٹل لوٹ گئے۔ سبھی ارکان اسمبلی فی الحال بنگلورو میں اپنے ہوٹل میں ہی رہیں گے۔

واضح ہو کہ وزیر اعلی کمل ناتھ نے حکومت کے فلورٹیسٹ سے پہلے باغی ارکان اسمبلی کو بنگلورو سے واپس لانے کا مطالبہ کیا تھا۔ وزیر اعلی کمل ناتھ نے گورنر لال جی ٹنڈن سے ملاقات کی۔ گورنر سے ملاقات کے بعد کمل ناتھ نے کہا کہ ہم اسپیکر کے ذریعہ طے کی گئی تاریخ 16 مارچ کو فلور ٹیسٹ کے لئے پوری طرح تیار ہیں۔ انہوں نے بی جے پی پر اپنے بائیس ارکان اسمبلی کو قیدی بنانے کا الزام لگایا۔ کمل ناتھ نے گورنر سے ریاست کے آئینی سر براہ ہونے کے ناتے وزارت داخلہ کے تعاون سے اپنے ارکان اسمبلی کو چھڑانے کی اپیل کی۔

دوسری جانب، بھوپال ایئر پورٹ پر کانگریس اور بی جے پی کے ارکان اسمبلی بھڑ گئے۔ دراصل مدھیہ پردیش سے بنگلورو گئے جیو ترادتیہ سندھیا کے حامی ارکان اسمبلی کے چارٹر طیارہ سے بھو پال آنے کی خبر ملتے ہی جمعہ کو بی جے پی اور کانگریس کے کارکن بڑی تعداد میں راجا بھوج ایئر پورٹ پر پہنچ گئے۔ اس دوران دونوں جانب سے نعرے بازی ہوئی اور ہاتھا پائی بھی۔

کانگریس اور بی جے پی ارکان اسمبلی کے بیچ دھکا مکی کے بعد ہوائی اڈہ پر حکم امتناعی (دفعہ144) نافذ کر دی گئی۔ ڈائریکٹر جنرل آف پولیس ارشاد علی نے میڈیا کو یہ خبر دی۔ بتایا گیا کہ حکم امتناعی نافذ ہونے کے بعد کانگریس اور بی جے پی کے کارکنوں کو ہوائی اڈہ سے تتر بتر کر دیا گیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close