تازہ ترین خبریںدلی این سی آر

مجاہد آزادی سید شوکت علی ہاشمی کی یاد میں پنشن کیمپ کا انعقاد

سیکڑوں بزرگ، بیواؤں اور معزوروں مرد و خواتین نے پنشن کیمپ سے کیا استفادہ

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
ملک کی تحریک آ زادی میں کوئیٹ انڈیا کے نعرے ساتھ اگست کرا نتی میں اہم کردار کرنے والے پرا نی دہلی کے عظیم مجاہد آزادی سید شوکت علی ہاشمی مرحوم کی یاد میں حاجی جمال الدین کی سر پرستی میں اور سید آصف علی شمی کی قیادت میں شوکت علی ہاشمی میموریل ٹرسٹ اور سماجی تنظیم پیوپلس آؤن فا ؤنڈیشن کے زیر اہتمام عوامی سہولت کے لئے پنشن کیمپ کا انعقاد گلی موچیان چتلی قبر پر کیا گیا۔ جس میں بیواؤں، معزوروں اور بزرگوں کی رکی ہوئی اور نئی پنشن کے فارم بھرے گئے۔ جس میں محکمہ پنشن گلابی باغ کے افسران مو جود تھے۔کیمپ میں عوام کی سہولت کیلئے سینئر ایڈوکیٹ کی جانب سے عوام کو مختلف مسائل پر مفت قانونی صلاح اور ان کے حل بھی بتا ئے گئے۔ اس موقع پرمجاہد آ زادی سید شوکت علی ہاشمی کو خراج عقیدت بھی پیش کیاگیا۔ کیمپ میں ایڈوکیٹ انجو اگروال اور جتیندر سنگھ نے قانونی صلاح دیں جبکہ پنشن دفتر سے ونود نے دستاویزات کی جانچ کر کے فارم جمع کئے۔

مجاہد آزادی شوکت علی ہاشمی کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے حاجی جمال الدین ے کہاکہ خدمت خلق ہی سب سے بڑی خدمت ہے۔ مجاہد آزادی سید شوکت علی ہاشمی بھی جب تک حیات رہے مختلف طریقوں سے لو گوں کی مدد کرنا ان کا شیوہ رہا، آج ان کی یاد میں یہ کیمپ منعقد کر کے ہم ضرورت مندوں کی مدد کر کے ان کو خراج عقیدت پیش کر رہے۔سید شوکت علی ہاشمی کے فرزند سید آصف ہاشمی نے بتایا کہ پرا نی دہلی میں اکثر ضرورت مند افراد خصوصاً بزرگ خواتین ایسی ہیں جن کی پنشن رکی ہو ئی ہیں یا ان کو پنشن شرو ع کرا نی ہے، جس کیلئے وہ یا تو دفتروں کے چکر کا ٹتے ہیں یا پھروہ دلالوں کے ذریعہ پنشن کا کا م کراتے ہیں جوان کے دستاویزات میں کمی نکال ان سے پیسے اینٹھ لیتے ہیں۔ ان بزرگ، معزور اور بیواؤں کو دلالوں سے بچا نے اور ان کو دفتروں کے چکر نہ کاٹنے پڑیں اس لئے اس کیمپ کا انعقاد کیا گیا ہے تا کہ گھر کے قریب ہی ضرورت مند لو گ اپنے پنشن کے فارم بھروا کر جمع کرا سکیں۔ اس کیلئے پنشن دفتر گلابی باغ کے افسران بھی یہاں موجود ہیں۔

سماجی تنظیم پیوپلس آؤن فا ؤنڈیشن کی صدر شاہین حسین نے بتا یا کہ یہاں جمع ہو نے والے تما م فارموں کو گلابی باغ پنشن آفس میں لیجایا جا ئے گا اور ان کو آن لائن کیا جا ئے گا۔ اکثر لوگ ایسے ہیں جن کی کئی کئی سال سے پنشن رکی ہو ئی ہے پہلے ان کی پنشن شروع ہو گی اس کے بعد نئی پنشن والوں کی پنشن شروع ہو گی۔ اس میں 15دن کا وقت کا درکار ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتا یا کہ جلد ہی جن افراد کی ڈبل جگہ پنشن ہو نے کے سبب پنشن کینسل ہو گئی ہیں ایسے کیسوں کا حل کیلئے بھی کیمپ بھی منعقد کیا جا ئیگا۔تا کہ ان ضرورت مندوں کی پنشن بھی شروع کی جا سکے۔

پنشن کیمپ میں سماجی کارکن محمد ناصر خان، عابدہ رحمن، عمر خاتون، ڈاکٹر سنجے ڈھینگرا،حسنین اختر منصوری، فخر الدین، محمد طلحہٰ، بیگم شاہ جہاں اور سید ناظم ہاشمی سمیت آر ڈبلیو اے گلی موچیان کے تمام ذمہ داران نے اپنی خدمات پیش کیں۔ صبح 10بجے سے شام تک چلنے والے پنشن کیمپ میں سیکڑوں مردو خواتین نے اپنی مختلف پنشن کے فارم بھروا کر استفاد ہ حاصل کیا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close