اترپردیشتازہ ترین خبریں

مایاوتی کا اعلان، کانگریس کے ساتھ کسی بھی ریاست میں نہیں ہوگا اتحاد

بہوجن سماج پارٹی کی صدر مایاوتی نے مہاگھٹبندھن کی تمام قیاس آرائیوں کو مسترد کرتے ہوئے منگل کو واضح کیا کہ کانگریس کے ساتھ کسی بھی ریاست میں انتخابی اتحاد نہیں کیا جائے گا۔

محترمہ مایاوتی نے یہاں کہا کہ لوک سبھا کے آنے والے انتخابات کے لئے بی ایس پی کسی بھی ریاست میں کانگریس کے ساتھ اتحاد نہیں کرے گی۔ اترپردیش میں لوک سبھا انتخابات کے لئے بی ایس پی نے سماجی پارٹی کے ساتھ اتحاد کیا ہے اور اس اتحاد کے کانگریس کے ساتھ انتخابی تال میل کرنے کی قیاس آرائی چل رہی ہے۔ مدھیہ پردیش میں بی ایس پی کے قانون ساز کے رکن کانگریس کی کمل ناتھ حکومت کی حمایت کر رہے ہیں۔

بتا دیں کہ اتر پردیش میں ایس پی (سماجوادی پارٹی) 37 سیٹ اور بی ایس ایس(بہوجن سماج پارٹی) 38 سیٹوں پرچناؤ لڑ رہی ہے. وہیں مدھیہ پردیش میں بی ایس ایس اور ایس پی کے درمیان ایک انتخابی معاہدہ بھی ہوا ہے. اتنا ہی نہیں بلکہ کانگریس اور بی ایس پی کے درمیان سیاسی فاصلہ مدھیہ پردیش، چھٹیس گڑھ اور راجستھان اسمبلی کے انتخابات کے دوران دیکھنے کو ملی تھی. مدھیہ پردیش میں گھٹبندھن نا ہونے کے لئے مایاوتی نے کانگریس کو زمہ دار ٹھہرایا تھا.

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close