اترپردیشتازہ ترین خبریں

ماب لنچنگ، پاکستان نہ جانے کی سزا

لکھنؤ، (پی این این)
کسانوں کی زمین ضبط کر نے کے معاملہ میں اتر پردیش میں زمین مافیا قرار اعظم خان نے مسلمانوں کے تعلق سے بڑا بیان دیا ہے۔ رام پور سے سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ اعظم خان نے کہا کہ ہندوستان میں مسلمانوں کو 1947 میں تقسیم میں پاکستان نہ جانے کی سزا ماب لنچنگ کی شکل میں مل رہی ہے۔

اعظم خان نے ملک میں ماب لنچنگ کی مذمت کرتے ہوئے اسے تقسیم وطن کے وقت مسلمانوں کے پاکستان نہ جانے کی سزا سے وابستہ کیا ہے۔اعظم خان نے کہا ہے کہ مسلمان 1947 کے بعد بھی سزا کا ٹ رہے ہیں۔ اگر مسلمان پاکستان چلے جا تے تو انہیںیہ سزا نہیں ملتی۔ مسلمان یہاں ہیں تو ہیں سزا تو بھگتیں گے۔ ملک کے مختلف حصوں سے ماب لنچنگ (ہجوم کے ذریعہ کیا گیا تشدد) کو لے کر رامپور سے رکن پارلیمنٹ اعظم خان نے ایک بڑا بیان دیا ہے۔

اعظم خان نے کہا کہ جو بھی ہوگا مسلمانوں کو اسے بھگتنا ہوگا۔ اپنے متنازع بیانوں کی وجہ سے سرخیوں میں رہنے والے اعظم خان نے اتنے پر ہی اکتفا نہیں کیا انہوں نے کہا کہ ہمارے جد امجد پاکستان کیوں نہیں گئے۔ یہ تو مولانا آزاد، جواہر لعل نہرو، سردار پٹیل اور بابائے قوم باپو سے پوچھئے۔ انہوں نے مسلمانوں سے کیا وعدے کئے تھے۔ اعظم خان نے کہاکہ ہمارے جد امجد کیوں نہیں گئے پاکستان۔ انہوں نے ہندوستان کو اپنا وطن مانا۔ انہیں اب اس وطن پرستی کی سزا تو ملے گی اور وہ برداشت کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ باپو (بابائے قوم مہاتما گاندھی) کی دل کو چھونے والی اپیل پر مسلمان پاکستان نہیں گئے تھے۔ باپو نے مسلمانوں سے کہا تھا کہ یہ ملک تمہارا ہے، اگر تقسیم باقی کے مسلمان بھی چاہتے تو ملک کی یہ شکل نہیں ہوتی۔ سماج وادی پارٹی کے سینئر لیڈر و رامپور سے رکن پارلیمنٹ اعظم خان اپنے بیانوں کی وجہ سے سرخیوں میں رہتے ہیں۔ ایک بار پھر انہوں نے ایسا بیان دیا ہے جس پر چہ مہ گوئیاں ہو رہی ہیں۔ اعظم خان نے ماب لنچنگ کی واردات پر کہا کہ یہ 1947 کے بعد مسلمانوں کو ملنے والی سزا ہے مسلمان جہاں بھی جائیں گے انہیں یہ برداشت کرنا ہی پڑے گا۔ اب جو بھی ہوگا اسے سہنا ہوگا۔

انہوں نے کہا ملک میں حکومتیں مضبوط ہیں اور مسلمان کمزور ہیں ،یہی وجہ ہے کہ ہمیں 1947 کے بعد سے بہت ذلت کی زندگی گزارنی پڑ رہی ہے۔ اگر مسلمان پاکستان چلے جاتے تو انہیں یہ سزا نہیں ملتی۔ مسلمان یہاں ہیں تو ہیں، سزا تو بھگتیں گے۔ اعظم نے آگے کہا کہ مسلمان تقسیم کے حصہ دار ہی نہیں تھے اور اس کے گناہ گار بھی نہیں تھے لیکن آج اس کی سزا مل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان تقسیم کے بعد سے مسلسل سزا بھگت رہے ہیں۔

رامپور سے پہلی مرتبہ پارلیمنٹ پہنچے اعظم خان کو رامپور ضلع انتظامیہ نے زمین مافیا قرار دیتے ہوئے زمین کے قبضہ کو لے کر ان کے خلاف 23 ایف آئی آر درج کی ہیں۔ اعظم خان نے اسے اپنے خلاف 23 ایف آئی آر درج کی ہیں۔ اعظم خان نے اسے اپنے خلاف سازش بتاتے ہوئے بی جے پی پر الزام لگایا کہ جب سے انہوں نے بی جے پی کے خلاف الیکشن جیتا ہے تب سے انہیں سزا دی جا رہی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close