اپنا دیشتازہ ترین خبریں

لوک سبھا انتخابات 2019: چوتھے مرحلہ میں 2 بجے تک 38.63 فیصد پولنگ

مغربی بنگال کے آسنسول پارلیمانی حلقہ میں تشدد کے چھٹ پٹ واقعہ کے علاوہ لوک سبھا انتخابات کے چوتھے مرحلے میں 72 سیٹوں پر پولنگ پرامن ہورہی ہے. دوپہر 2 بجے تک کی رپورٹ کے مطابق 38.63 فیصد ووٹر اپنی رائے دہی کا استعمال کر چکے ہیں۔

لوک سبھا کی 72 سیٹوں کے ساتھ ہی اڑیسہ اسمبلی کی 42 نشستوں کے لئے بھی صبح سات بجے پولنگ شروع ہوئی۔ راجستھان، مدھیہ پردیش اور جھارکھنڈ میں آج ووٹنگ کا پہلا مرحلہ ہے۔ آسنسول میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے بابل سپریو کے کارپر ترنمول کانگریس کے کارکنوں نے حملہ کیا اور شیشے توڑ ڈالے. اس کے علاوہ دیگر تمام پارلیمانی حلقوں سے اب تک کسی ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع نہیں ہے. صبح کے وقت پولنگ کی رفتار کافی سست تھی، لیکن بعد میں تیزی آئی اور بہت سی جگہوں پر ووٹروں کی لمبی قطاریں بھی دیکھنے کو ملی۔

پہلے تین مراحل کی طرح ہی مغربی بنگال میں چوتھے دور میں ووٹنگ کی رفتار دیگر لوک سبھا حلقوں کے مقابلے میں کافی زیادہ ہے۔ یہاں آٹھ سیٹوں پر پولنگ ہو رہی ہے اور گیارہ بجے تک 35.10 فیصد ووٹر ووٹ ڈال چکے ہیں۔ جموں وكشمير کی اننت ناگ سیٹ پر گیارہ بجے تک صرف 3.74 فیصد ووٹروں نے اپنی رائے دہی کا استعمال کیا۔

ریاستوں میں جھارکھنڈ میں 29.21 اور بہار میں 18.26 ووٹر ووٹ ہو چکے ہیں. مدھیہ پردیش میں 26.62، مہاراشٹر میں 16.47، اڑیسہ میں 19.67، راجستھان میں 29.19 اور اتر پردیش میں 21.18 فیصد پولنگ ہو چکی ہے۔ جن اہم شخصیات نے اپنے متعلقہ پولنگ مراکز میں ووٹ ڈالا ہے، ان میں پریش راول، کمل ناتھ، پونم مہاجن، ریکھا، ارملا ماتونڈكر، انل امبانی اور روی کشن اہم ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close