اترپردیشتازہ ترین خبریں

قنوج میں دردناک بس حادثہ، 10 افراد کی موت، کئی کی حالت نازک

اترپردیش کے ضلع قنوج کے چھبرامئو علاقے میں جمعہ کی دیر رات بس اور ٹرک کی آمنے سامنے ہوئے ٹکر کے بعد لگی آگ میں کم سے کم 10 مسافروں کی موت ہوگئی جبکہ متعدد مسافر شدید طور سے زخمی ہوگئے۔

جمعہ کی دیر رات یہ حادثہ اس وقت پیش آیا جب قنوج میں جی ٹی روڈ پر چھبرامئو کے نزدیک بس اور ٹرک آپس میں ٹکرا گئے۔ ٹکر اتنی شدید تھی کہ دونوں گاڑیوں میں آگ لگ گئی۔ بس کے مسافروں نے کسی طرح خود کو بچایا جبکہ 21 مسافروں کو مقامی افراد اور پولیس نے بس سے باہر نکالا۔

کانپور رینج کے انسپکٹر جنرل آف پولیس موہت اگروال نے میڈیا نمائندوں کو سنیچر کو بتایا کہ حادثے میں مہلوکین کی لاشیں بری طرح جل گئی ہیں اور صرف ہڈیا ہی بچی ہیں لہذا صرف ڈاین اے ٹسٹ ہی مہلوکین کی اصل تعداد کا اندازہ ہوپائے۔ انہوں نے بتایا کہ سردست کوئی 8 تا 10 افراد کی لاشیں بس میں ملی ہیں۔ لیکن وہ اس قدر جلی ہوئی ہیں کہ ان کی شناخت صرف ڈی این اے ٹسٹ کے بعد ہی ممکن ہے۔

آئی جی نے بتایا کہ بس میں تقریبا 45 افراد سوار تھے۔21 افراد کو بچا لیا گیا جن میں سے 12 کو تروا میڈیکل کالج اور 11 کو ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے جبکہ 2 افراد کو مکمل طور سے بحفاظت بچا لیا گیا تھا انہیں گھر بھیج دیا گیا ہے۔ لیکن اب بھی بس کے تقریبا 18۔20 مسافر غائب ہیں۔ ممکن ہے کہ ان کی بھی موت ہوچکی ہو لیکن ابھی کچھ بھی نہیں کہا جاسکتا۔

قنوج ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ روندر کمار کے مطابق تقریبا 43 مسافر بس میں سوار تھے جن میں سے 21 مسافر زخمی ہوگئے جنہیں علاج کے لئے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ مسٹر کمار نے بتایا کہ اس بات کے بھی اطلاعات ہیں کہ کچھ مسافر بس سے بحفاظت نکلنے میں کامیاب ہوگئے تھے۔ فورنسک ٹیم واقعہ کی جانچ کررہی ہے اور وہی مہلوکین کی تعداد کا اندازہ لگائے گی۔

بس فرخ آباد ے جئے پور جارہی تھی کہ اچانک غلط سمت سے آرہے ٹرک سے ٹکرا گئی۔ ٹکر میں ٹرک کے تیل ٹینک میں دھماکہ ہوگیا۔ بس سے مکمل طور سے جلی ہوئی نو لاشیں برآمد کی گئی ہیں۔ جبکہ ٹرک سے ایک لاش ملی ہے۔ زخمیوں میں 13 کی حالت نازک ہے۔ زخمیوں میں 10 بچے ہیں۔

اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے اس خوفناک حادثے پر اپنے گہرے رنج وغم کا اظہا کیا ہے۔ وزیراعلی نے متأثرین کے اہل خانہ کے لئے دو۔دو لاکھ روپئے اور زخمیوں کے لئے 50۔50 ہزار روپئے مالی مدد کے طور پر دینے کا اعلان کیا ہے۔ وزیر اعلی کی ہدایت پر رات میں ہی آبکاری وزیر رام نریش اگنہوتری جائے حادثہ پر موجود تھے۔ انہوں نے واقعہ کی اعلی سطحی انکوائری کا اعلان کیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close