آئینۂ عالم

قرض کے جال میں پھنسےہیں ہم، ملک چلانے کے لئے پیسے نہیں ہیں:عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے یہ کہہ کر عوام کو صدمہ سے دوچار کردیا ہے کہ حکومت چلانے کے لئے پیسے نہیں ہیں۔ عمران خان نے جمعہ کو ایسی صورت حال کے لئے مسٹر عباسی کی زیر قیادت سابقہ حکومت پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ گھاٹے سے دوچار پروجیکٹ چلارہی تھی۔

میڈیارپورٹ کے مطابق تاہم انہوں نے کہا کہ ’’ قوم اور حکومت ایک ساتھ ان چیلنجوں کا مقابلہ کرسکتے ہیں۔ انہوں نے اسلام آباد میں نوکرشاہوں کی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک پر بہت زیادہ قرض ہے ، ہمارے سیاست داں ، ہماری بیورکریسی اور عوام میں تبدیل لانے کی ضرورت ہے۔ ہم لوگ حقیقی معنوں میں ایک دوسرے سے منسلک ہیں ۔ اگر ہم نہیں بدلتے ہیں تو تباہی ہماری منتظر ہے۔‘‘

وزیراعظم نےمزید کہا کہ "ملک کی زیادہ تر آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے جن کے پاس کوئی کا م نہیں ہے۔ اورملک چلانے کے لئے ہمارے پاس پیسے نہیں ہیں۔ ملک کی 70 فیصدآبادی کی عمر 30 سال سے کم ہے۔ ہر روز نوجوانوں کی تعداد بڑھ ر ہی ہے لیکن ہمارے پاس کوئی ملازمت نہیں ہے۔”

انہوں نے کہا کہ ہمیں سود کی مد میں روزانہ 6 ارب روپے ادا کرنے پڑرہے ہیں۔ اور کہا کہ لوگوں کو نوآبادیاتی دور کی ذہنیت سے نکالنا ضروری ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہوسکتا ہے کہ ’’خدا نے یہ بحران اسی لئے پیدا کیا ہے کہ وہ چاہتا ہے کہ ہم بدل جائیں۔‘‘ وزیراعظم عمران خان نے مزید کہا کہ اگر قوم اور حکومت ایک ساتھ آجائیں تو کوئی ایسا چیلنج نہیں ہے جس کا ہم مقابلہ نہ کرسکٰیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close