تازہ ترین خبریںدلی این سی آر

فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور اتحاد کے جشن ’پھول والوں کی سیر‘ کا آغاز

پھول والوں کی سیر کے منتظمین نے وزیر اعلی، نائب وزیر اعلی، چیف سکریٹری کو پیش کیا پھولوں کا روایتی پنکھا

نئی دہلی (انور حسین جعفری)

قومی اتحاد، بھائی چارہ اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے فروغ کے تاریخی جشن ’پھول والوں کی سیر‘ کا آج راجدھانی دہلی میں آغاز ہو گیا ہے۔ انجمن سیر گل فروشاں کی جانب سے آج دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال کو پھولوں کا روایتی پنکھا پیش کرکے اس محبت و آشتی کے اس جشن کا آغاز کیا۔ دہلی سکریٹریٹ میں منعقدہ تقریب میں منتظمین نے وزیر اعلی کا پھولوں اور شہنائی کی دھن بجا کر والہانہ استقبال کیا، ساتھ ہی نائب وزیر اعلی منیش سسودیا، دہلی کے چیف سکریٹری وجے دیو اور سابق وزیر سومناتھ بھارتی کو بھی پھولوں کا رو ایتی پنکھا پیش کیا۔

پھول والوں کی سیر کے آغاز اپنے خطاب میں وزیر اعلی اروند کجریوال نے کہاکہ معاشرے میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی، محبت و اشتی اور قومی اتحاد کو فروغ دینے والے اس تاریخی پھول والوں سیر جیسے جشن اور تقریبات کو جو ش و خروش سے منایا جانا چاہئے اور لوگوں میں ایک دوسرے کے تئیں محبت، احترام اور خیر سگالی کے پیغامات کو جوش و خروش سے عام کرنا چاہئے۔ اس ثقافتی جشن کی اہمیت بتاتے ہوئے انجمن سیر گل فروشاں کی جنرل سکریٹری اوشا کمار نے کہا کہ مغلیہ دور سے چلے ا ٓرہے قومی یکجہتی اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے فروغ کے اس تاریخی جشن کو 1942 میں انگریزوں بھارت چھوڑو تحریک کی مخالفت میں انگریزوں نے اپنے بانٹوں اور راج کرو کی پالیسی کے تحت بند کرا دیا تھا۔ لیکن دہلی والوں کی اپیل پر آزاد ہندوستان میں اس وقت کے وزیر اعظم پنڈت جواہر لال نہرو نے اس جشن کو دوبارہ شروع کیا تھا۔

واضح رہے کہ فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی علامت پھول والوں کی سیرمہرولی میں عظیم صوفی بزرگ خواجہ قطب الدین بختیار کاکیؒ کی درگاہ پر جائیں گے، جہاں ہندو اور مسلمان مل کر ڈھول، تاشوں کے ساتھ مزار اقدس پر پھولوں کی چادر چڑھائیں گے۔ اسی کے ساتھ پاندوئوں کے دور کے یوگ ماتا مندر میں چھتر اور پھولوں کا پنکھا چڑھائیں گے۔ اس پھول والوں کی سیر کے ذریعہ ملک کی قومی یکجہتی اور سالمیت کا عظیم الشان اور بھرپور نظارہ اس وقت دیکھنے کو ملے گا جب ہندوستان کی مختلف ریاستوں سے آئے ثقافتی تنظیمیں 19 اکتوبر کو اپنے لوک فن کی جھلک پیش کریں گے جب درگاہوں اور مندروں کیلئے وہ سجے ہوئے پنکھے لائیں گے۔ جو خواجہ بختیار کاکی ؒکی درگاہ پر، پھولوں کی چادر اور یوگمایا مندر کو پھولوں کا پنکھا اور چھتر چڑھائیں گے اس سے یہاں کی رونق دو بالا ہو جائیگی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close