اپنا دیشتازہ ترین خبریں

فاروق، عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی کا شجاعت بخاری کو خراج عقیدت

جموں وکشمیر کے سابق وزرائے اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبداللہ، عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی نے نامور کشمیری صحافی شجاعت بخاری کو پہلی برسی پر خراج عقیت پیش کیا ہے۔ فاروق اور عمر عبداللہ نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہا کہ مرحوم ایک قابل قدر صحافی تھے اور صحافتی میدان میں خداداد صلاحیتوں سے مالا مال تھے۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم نے روزنامہ رائزنگ کشمیر کے ذریعے کشمیری عوام کے مشکلات اور مسائل اُجاگر کرنے میں جو رول ادا کیا وہ ناقابل فراموش ہے۔

دونوں لیڈران نے کہا کہ شجاعت بخاری ہندوستان اور پاکستان کی دوستی کو مضبوط بنانے اور کشمیری عوام کے مسائل کو اجاگر کرنے میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کیا اور احساس محرومی کے شکار غریب لوگوں کے حالات کو اپنے روزنامہ میں اشاعت کرکے اُن کا ازالہ کرانے میں بھی کلیدی رول ادا کیا۔ شجاعت بخاری نے انگریزی کے علاوہ اردو روزنامہ بلند کشمیر اور کشمیر روزنامہ سنگرمال کے ذریعے بھی صحافتی خدمات انجام دینے کے ساتھ ساتھ اردو اور کشمیری زبانوں کی بے لوث خدمت کی۔ انہوں نے کہا کہ شہید شجاعت بخاری نے کشمیری زبان، کشمیری تہذیب و تمدن کی شان بحال کرنے اور نئی روح پھونکنے کا بیڑا اٹھایا تھا۔

اس دوران عمر عبداللہ نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا: ‘سید شجاعت بخاری کی پہلی برسی پر میری دعائیں شجاعت اور اُن کے کنبے کے ساتھ ہیں۔ اللہ شجاعت کو جنت میں اعلیٰ مقام اور اُن کے اہل خانہ کو ہمت عطا کرے’۔ دریں اثنا محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ شجاعت بخاری ایک بہادر صحافی ہی نہیں بلکہ امن کے داعی بھی تھے۔ انہوں نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا: ‘میں شجاعت بخاری کو پہلی برسی پر خراج پیش کرتی ہوں، شجاعت صرف ایک بہادر صحافی ہی نہیں تھے بلکہ وہ امن کے داعی بھی تھے جس نے امن کے لئے ایک جہاد شروع کیا تھا اور ان کو اپنے نظریات پر شہید کیا گیا، اُن کے بچے اُن کی میراث کے وارث ہیں’۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close