اترپردیشتازہ ترین خبریں

علی گڑھ: سی اےاے کے خلاف مذہبی مقام پر پتھراؤ، تناؤ کے بعد پولیس تعینات

اترپردیش کے علی گڑھ شہر میں اتوار کو شہریت ترمیمی قانون (سی اےاے)کے خلاف کئے جارہے مظاہرے کے دوران اتوار کو کچھ نوجوانوں نے ترکمان گیٹ پر واقعہ نودرگا پتھواری مندر پر پتھراؤ کیا، اس کے بعد تناؤکو دیکھتے ہوئے وہاں بڑی تعداد میں پولیس فورس تعینات کردی گئی ہے۔

پولیس ذرائع کے مطابق آج شاہ زمان عیدگاہ کے سامنے سی اےاے کےاحتجاج میں جاری مظاہرے میں خواتین، بچے اور مرد مظاہرہ کرکے حکومت کے خلاف نعرے بازی کررہے تھے۔ مظاہرے کے پیش نظر اپرکوٹ علاقے کے مسلم علاقوں کے سبھی بازار بند رہے۔ اس کے علاوہ خیربائی پاس پر نادا پل کے نزدیک بھیم آرمی کے ذریعہ ہندوستان بند کے اعلان پر خواتین اور مردوں کے ایک گروپ نے جام لگا دیا ہے، جس کا ملا جلا اثر دیکھنے کو مل رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ سی اے اے اور این آر سی کے خلاف مظاہرے کے دوران تقریباً دو بجے کچھ نوجوانوں نے ترکمان گیٹ پر تاریخی نودرگا پتھواری مندر پر پتھراؤ کردیا۔مندر پر پتھراو کے خلاف بالمیکی بستی کے لوگ بھی سڑک پر آگئے۔ دونوں فریقوں نے ایک دوسرے پر پتھراؤ کیا۔ جائےوقوع پر پہنچی پولیس اور انتظامیہ کے افسروں نے لوگوں کو سمجھا بجھا کر معاملہ ختم کرایا۔ اس کے بعدتناؤکے پیش نظراحتیاط کے طورپر پولیس فورس تعینات کر دیا گیا ہے۔ افسر حالات پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close