اپنا دیشتازہ ترین خبریں

عام انتخابات 2019: چوتھے مرحلے کی انتخابی تشہیر ختم، 29 اپریل کو ہوگی پولنگ

لوک سبھا انتخابات کے چوتھے مرحلے میں 29 اپریل کو ہونے والی پولنگ کے لئے انتخابی مہم ہفتے کی شام پانچ بجے ختم ہوگئی۔ اسی کےساتھ ہی اڈیشہ اسمبلی انتخابات کے چوتھے اور آخری مرحلے کی انتخابی مہم کا شور آج تھم گیا۔

جموں و کشمیر کی اننت ناگ سیٹ سمیت نو ریاستوں کی 72 نشستوں اور اڈیشہ اسمبلی کی 42 نشستوں کے لئے پیر کے روز پولنگ ہوگی۔ سیکورٹی وجوہات کی بنا پر اننت ناگ سیٹ پر تین حصوں میں پولنگ ہو رہی ہے۔ اس سیٹ کے ایک حصے میں تیسرے مرحلے کے تحت ووٹ ڈالے جا چکے ہیں جبکہ چوتھے اور پانچویں مرحلے میں دیگر دو حصوں میں ووٹنگ ہونی ہے۔

لوک سبھا انتخابات کے چوتھے مرحلے میں 961 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ ہونا ہے۔ ایک لاکھ 40 ہزار 849 پولنگ مراکز پر 127958477 ووٹر اپنے حق رائے دہی کا استعما کرسکیں گے۔ ان میں 67322777 مرد، 60631574 خواتین اور 4126 تیسری صنف کے افراد شامل ہیں۔ اس مرحلے میں مرکزی وزیر گری راج سنگھ بہار کی بیگوسرائے سیٹ سے، گجیندر سنگھ شیخاوت راجستھان کی جودھپور سیٹ سے، پی پی چودھری راجستھان کی پالی سیٹ سے اور ایس ایس ہلووالیہ مغربی بنگال کی برددھمان۔ درگاپور سیٹ سے بھارتیہ جنتا پارٹی کے ٹکٹ پر اپنی قسمت آزما رہے ہیں۔

بیگوسرائے میں طلبا سیاست سے قومی سیاست میں آئے کنہیا کمار کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے امیدوار کے طور پر مسٹر سنگھ کو ٹکر دے رہے ہیں۔ راشٹریہ جنتا دل کے تنویر حسن کی موجودگی کی وجہ سے وہاں مقابلہ سہ رخی ہو گیا ہے۔ جودھپور میں مسٹر شیخاوت کا مقابلہ راجستھان کے وزیراعلی اشوک گہلوت کے بیٹےویبھو گہلوت سے ہے جو کانگریس کے امیدوار ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close