اپنا دیشتازہ ترین خبریں

صدر اور وزیراعظم سمیت متعدد لیڈروں کا سشما سوراج کو خراج عقیدت

صدر جمہوریہ ہند رام ناتھ كووند، نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو، وزیراعظم نریندر مودی، لوک سبھا اسپیکر اوم برلا اور سماج وادی پارٹی کے لیڈرو اتر پردیش کے سابق وزیر اعلی ملائم سنگھ یادو سمیت متعدد لیڈروں نے سابق وزیر خارجہ سشما سوراج کے گھر جا کر انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔

محترمہ سوراج کا منگل کی رات دل کا دورہ پڑنے سے یہاں آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز(ایمس) میں انتقال ہو گیا تھا۔ ان کا جسد خاکی آخری دیدار کے لئے ان کی رہائش گاہ پر رکھا گیا ہے۔ صدر كووند آج صبح تقریبا نو بجے محترمہ سشما سوراج کی رہائش گاہ پہنچے اور ان کے جسد خاکی پر گلہائے عقیدت پیش کرکے انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔ انہوں نے محترمہ سوراج کے اہل خانہ سے بھی بات کی۔ اس کے بعد مسٹر اوم برلا نے ان کی رہائش گاہ پہنچے اور انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔ نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو نے بھی محترمہ سوراج کے جسد خاکی پر گلہائے عقیدت نذر کرکے خراج عقیدت پیش کیا۔

اس کے بعد وزیراعظم نریندر مودی محترمہ سوراج کے رہائش گاہ پر پہنچے۔ انہوں نے محترمہ سوراج کو خراج عقیدت پیش کیا اور اس دوران وہ جذباتی ہو گئے۔ وزیر اعظم نے محترمہ سوراج کے اہل خانہ سے بات کی اور انہیں صبر کی تلقین کی۔ اس دوران مسٹر نائیڈو بھی وہاں موجود تھے۔ ایس پی لیڈر ملائم سنگھ بھی محترمہ سوراج کو خراج عقیدت پیش کرنے پہنچے۔ اس کے علاوہ بڑی تعداد میں محترمہ سوراج کے حامیوں نے بھی اپنی عزیز لیڈر کو خراج عقیدت پیش کیا۔ ان کا جسد خاکی بی جے پی ہیڈ کوارٹر میں رکھا جائے گیا ہے جہاں پارٹی کے لیڈر اور کارکن ان کے آخری دیدار کر رہے ہیں۔

وہیں کانگریس پارلیمانی پارٹی کی لیڈر سونیا گاندھی اور سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی رہنما اور سابق وزیر خارجہ سشما سوراج کی موت پر شدید رنج و الم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایک عظیم پارلیمنٹرین اور غیر معمولی مقرر تھیں۔

محترمہ سوراج کے شوہر کوشل سوراج کو آج ارسال تعزیتی پیغام میں محترمہ گاندھی نے کہا کہ محترمہ سوراج کی اچانک موت کی خبر سے انھیں بےحد تکلیف ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ محترمہ سوراج قدرت کی جانب سے غیر معمولی تحفہ تھیں اور انہوں نے ہر حال میں اپنی بہادری، عزم، سپردگی اور استعداد کا ثبوت دیا ہے۔ اپنی سیاسی زندگی میں انہوں نے عوام کو اپنی خدمات دیں اور بیرون ملک پھنسے ہر ہندوستانی کی مدد کرکےسفارتی نظریے کو تبدیل کیا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close