اپنا دیشتازہ ترین خبریں

صحافی کے خلاف کورٹ پنہچے ایم جے اکبر، ہتک عزت کا مقدمہ درج کروایا

وزیرمملکت خارجہ ایم جے اکبر نے می ٹو مہم میں جنسی استحصال الزام عائد کئے جانے پر ملزم صحافی پریا رمانی کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا ہے۔ غیر ملکی دورہ سے اتوار کوواپس آنے کے بعد اپنے گھر پر 10 سے زائد عورتوں کے لگائے گئے الزامات کو بے بنیاد بتاتے ہوئے دھمکی دی تھی کھ وہ اس معاملے میں ہتک عزت کا مقدمہ دائر کریں گے۔

انہوں نے آج، اپنے وکیل سندھپ کپور کے ذریعہ، تعزیرات ہند کی دفعہ 499 کے تحت پریا رامانی کے خلاف پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں ہتک عزت کا مقدمہ درج کرایا ۔ ان کے وکیل نے عرضی میں کہا ہے کہ مسٹر اکبر ملک میں ایک معزز صحافی رہے ہیں اور اس پیشہ میں ان کی طویل زندگی گزری ہے۔انہوں نے ملک کا پہلا سیاسی ہفتہ وار اخبار نکالا تھا ۔ ان کے مؤکل کے خلاف پریہ رمانی نے بے بنیاد من گھڑت اوچھے الزامات الزام لگائے ہیں جس سے ان کی شبیہ اور وقار کو دھکا پہنچا ہے۔ اس طرح یہ ان کے ہتک عزت کا معاملہ بنتا ہے۔

واضح رہے کہ ہتک عزت کے معاملے میں، دو سال کی سزا یا جرمانہ یا دونوں کا التزام ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ مسٹر اکبر کے خلاف سوشل میڈیا میں اس طرح کے الزامات لگانے سے ان کے مؤکل کی شبیہ کو خاندان ، معاشرہ اور دوستوں میں ٹھیس پہنچی ہے، جس کی تلافی نہیں کی جاسکتی ہے۔ مسٹر اکبر پر پریہ رمانی کے علاوہ، غزالہ وہاب،انجو بھارتی، شتہ پال، شوما رہاسمیت کئی خاتون صحافیوں نے جنسی استحصال اور تشدد کا الزام لگایا تھا۔ اس وقت مسٹر اکبر نائجیریا میں تھے۔ ان کے استعفے کا مطالبہ اب زور پکڑنے لگا ہے ۔ اس دوران، کانگریس نے بھی کہا ہے کہ بیٹی بچاؤ-بیٹی پڑھاؤ کے نعرے لگانے والے وزیر اعظم نریندر مودی اس معاملے میں اپنا رخ واضح کریں ،وہ متاثرہ لڑکیوں کے ساتھ ہیں یا مسٹر اکبر کے ساتھ ۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close