اپنا دیشتازہ ترین خبریں

شیوسینا کو 7 اور اراکین اسمبلی کی حمایت، مشکل میں بی جے پی

مہاراشٹرمیں نئی حکومت کی تشکیل کے سلسلے میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)اور شیو سینا کے درمیان گذشتہ ایک ہفتے سے جاری رسہ کشی کے درمیان ادھو ٹھاکرے کی پارٹی نے جمعرات کو کہا کہ اسے سات اور اراکین اسمبلی کی حمایت مل گئی ہے۔

شیوسینا کی جانب سے جاری آج سات اراکین اسمبلی کی فہرست میں آزاد اور دیگر پارٹیوں کے رہنما شامل ہیں۔ یہ اطلاع شیوسینا کے میڈیاسیل نے جاری کی ہے۔ اس میں چار آزادرکن اسمبلی منجولا گاوِت، چندرکانت پاٹل، اشیش جیسوال اور نریندر بھونڈیکر نے شیوسینا کی حمایت کی ہے۔ تین دیگر اراکین اسمبلی بچوکاڈو، راجکمارپٹیل پرہار (پرہار جن شکتی پارٹی)اور شنکرراؤ گڈاکھ(کرانتی کاری شیتکاری پارٹی)ہیں۔ مہاراشٹرکی 288 اراکین اسمبلی کے 24 اکتوبر کو آنے والے نتائج میں بی جے پی 105 سیٹوں کے ساتھ سب سے بڑی پارٹی کے طور پر ابھری تھی۔ شیوسینا کے 56 اراکین اسمبلی فتحیاب ہوئے ہیں۔ ان سات اراکین اسمبلی کو ملاکر اس کے حامیوں کی تعداد63 ہو گئی ہے۔

قبل ازیں پارٹی کے نو منتخب اراکین اسمبلی کی شیوسینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے کی صدارت میں یہاں واقع شیوسینا بھون میں میٹنگ ہوئی جس میں مسٹر ایکناتھ شندے کو اراکین اسمبلی پارٹی کا رہنما منتخب کیا گیا۔حالیہ مہاراشٹر میں منعقد ہونے والے اسمبلی انتخابات میں 105 سیٹوں پر جیت ملی تھی جبکہ شیوسینا 56 پر فتحیاب ہوئی تھی۔

انتخابی نتائج کے اعلان کے ایک ہفتے کے بعد بھی دونوں پارٹیوں میں ابھی تک وزیراعلیٰ کے عہدے کے سلسلے میں رسہ کشی جاری ہے۔ شیوسینا وزیراعلیٰ کے عہدے کے لیے 50۔50 کے فارمولے پر اڑی ہوئی ہے جبکہ بی جے پی اس سے متفق نہیں ہے۔ بدھ کے ر وز بی جے پی اراکین اسمبلی کی پارٹی کی اجلاس میں دیویندر فڑنویس کو اراکین اسمبلی کی پارٹیکا لیڈر منتخب کیا گیا تھا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close