اپنا دیشتازہ ترین خبریں

شیوسینا کا مطالبہ، سری لنکا کی طرح ہندوستان میں بھی برقعہ اور حجاب پر لگے پابندی

سری لنکا میں میں ہوئے دہشت گردانہ بم دھماکوں کے بعد وہاں کی حکومت نے برقع اور حجاب پر پابندی لگا دی ہے، جس کے بعد اب ہندوستان میں بھی برقعہ اور حجاب پر پابندی لگانے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے. یہ مطالبہ کوئی اور نہیں بلکہ مسلم خواتین کے مسیحا کہے جانے والے پی ایم مودی کی اتحادی پارٹی شیوسینا کر رہی ہے شیوسینا نے اپنے مراٹھی اخبار’سامنا‘ میں شائع اداریہ کے ذریعے ہندوستان میں قومی سطح پر برقعہ پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

آپ کی جانکاری کے لئے بتا دیں کہ مہارشٹر میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی اتحادی پارٹی شیوسینا نے وزیراعظم نریندرمودی سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر راون کی لنکا میں برقعہ پرپابندی لگ سکتی ہے تو رام کے ایودھیا میں برقعہ پرپابندی کیوں نہیں لگ سکتی ہے۔ حالانکہ شیوسینا کے اس مطالبے کو ان کی حلیف جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی نے اس سے عدم اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ پڑوسی ملک سری لنکا میں پچھلے دنوں ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد ایسا قدم اٹھایا گیا ہے لیکن مودی حکومت نے دہشت گردی کو روکنے کے لئے خاطر خواہ اقدامات کئے ہیں۔

بی جے پی کے ترجمان جے وی ایل نرسمہا راو نے منگل کو یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ سری لنکا میں دہشت گردانہ حملے کے بعد منہ ڈھکنے پر پابندی لگائی گئی ہے جب کہ مودی حکومت نے سرحد پار سے دہشت گردی پر روک لگا دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت کے آنے کے بعد سے مہاراشٹر یا کہیں اور دہشت گردانہ حملے نہیں ہوئے ہیں۔ مسٹر راو نے کہا کہ وہ اس وقت برقعہ پر پابندی لگانے کی ضرورت محسوس نہیں کرتے۔ انہوں نے کہا کہ ہر ملک اپنے مفاد میں سیکورٹی سے متعلق فیصلے کرتا ہے۔ مودی حکومت کے رہتے خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔

این ڈی اے کی ایک دیگر حلیف جماعت آر پی آئی کے سربراہ رام داس اٹھوالے نے بھی شیوسینا کے اس مطالبہ کی مخالفت کی ہے اور کہا ہے کہ برقعہ پہننے والا ہر کوئی دہشت گردانہ سرگرمیوں میں شامل نہیں ہوتا۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close