اپنا دیشتازہ ترین خبریں

شیلا دکشت کے اچانک انتقال سے ملک میں غم کی لہر

صدر رام ناتھ کووند، نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو اور وزیر اعظم نریندر مودی نے دہلی کی سابق وزیر اعلی شیلا دکشت کی وفات پر گہرے رنج وغم کا اظہار کیا ہے اور انہیں سماج کے تئیں وقف ایک شاندار شخصیت قرار دیا۔

محترمہ دکشت کا آج یہاں ایک پرائیوٹ اسپتال میں ہارٹ اٹیک ہونے سے انتقال ہوگیا۔ ان کی عمر 81 برس تھی۔ مسٹر کووند نے ایک تعزیتی پیغام میں کہا کہ محترمہ دکشت کے انتقال کی خبر سے گہرا دکھ پہنچا ہے۔ وہ دہلی کی سابق وزیر اعلی او رسینئر سیاسی رہنما تھیں۔ ان کے دور حکومت میں قومی دارالحکومت میں شاندار تبدیلیاں آئیں جس کے لئے انہیں یاد رکھا جائے گا۔ صدر نے محترمہ دکشت کسے رشتہ داروں اور ان کے ساتھیوں کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

محترمہ دکشت گزشتہ کچھ دنوں سے بیمار چل رہی تھیں۔ آج صبح انہیں گھر پر دل کا دورہ پڑا جس کے بعد انہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا لیکن دوپہر کو پونے چار بجے انہیں پھر سے دل کا دورہ پڑا جس سے ان کا انتقال ہوگیا۔ اچانک ان کے انتقال کی خبر ملنے پر راجدھانی میں لوگ حیرت زدہ رہ گئے۔ صدر رامناتھ کووند، وزیراعظم نریندر مودی، کانگریس کے صدر راہل گاندھی سمیت کئی سیاسی جماعتوں نے ان کے انتقال پر گہرے رنج وغم کا اظہار کیا۔

وہ پندرہ برس تک دہلی کی وزیراعلی رہیں لیکن 2013میں وہ موجودہ وزیراعلی اروند کیجریوال سے نئی دہلی اسمبلی سیٹ سے الیکشن ہار گئی تھیں۔ انہوں نے آٹھویں لوک سبھا میں اترپردیش کی قنوج سیٹ کی نمائندگی کی تھی۔ اس بار کے لوک س بھا انتخابات میں وہ شمال مشرقی دہلی سے کانگریس کی امیدوار تھیں لیکن جیت نہیں سکی تھیں۔

کنبہ کے ذرائع کے مطابق محترمہ دکشت کو آج صبح اچانک طبیعت خراب ہونے کے بعد ایسکورٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جہاں انہوں نے دوپہر کو تقریباََ چار بجے آخری سانس لی۔ ان کے کنبہ میں ایک بیٹا اور ایک بیٹی ہے۔ وہ پندرہ برس تک دہلی کی وزیراعلی رہیں ہیں.

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close