اپنا دیشتازہ ترین خبریں

شہریت ترمیمی بل کی مخالفت میں آسام بند کا اعلان

شہریت ترمیمی بل (کیب) کو لے کر ریاست میں کانگریس، اے ای یو ڈی بی ایف سمیت کئی غیر سیاسی تنظیموں کی پرزور مخالفت کر رہے ہیں۔ مخالفت کرنے والی تنظیموں کا کہنا ہے کہ کیب کی منظوری سے بنگلہ بولنے والے لوگوں کی بڑے پیمانے پر ریاست کے شہری بن جائیں گے جس سے آسامی زبان، ثقافت، تاریخ کے ساتھ ہی مقامی لوگوں کے سیاسی حقوق چھن لئے جائیں گے۔ اس لئے اسے کسی بھی قیمت پر قبول نہیں کیا جا سکتا ہے۔

گزشتہ کچھ دنوں سے کیب کو لے کر ریاست میں مسلسل تحریکیں چل رہی ہیں۔ پیر کو پارلیمنٹ میں حکومت شہریت ترمیمی بل کو پیش کر رہی ہے۔ ایسے میں بالائی آسام کے موران، سوتیا طالب علم اداروں نے آسام بند کا اعلان کیا ہے۔ آسام بند کا سب سے زیادہ اثر بالائی آسام کے تنسکیا ضلع میں دیکھا گیا ہے۔ بند حامیوں نے سڑک پر جگہ جگہ ٹائر جلا کر گاڑیوں کی نقل و حرکت کو متاثر کرنے کی کوشش کی ہے۔

اس دوران بی جے پی لیڈر اور ممبر اسمبلی سنجے کسان کے گھر کا گھیراؤ کر کئی مخالف تنظیموں نے نعرے بازی کی اور ان کے گھر کے سامنے سڑک پر ٹائر جلا کر احتجاج کیا۔ موقع پر کافی تعداد میں پولیس فورس موجود تھی۔ اس کے سبب مظاہرین کو ہٹا دیا گیا۔ اگرچہ بند کے اثرات تنسکیا کے علاوہ ریاست کے دیگر حصوں میں کوئی خاص نہیں دیکھا جا رہا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ حکمراں پارٹی بی جے پی حکومت میں شامل آسام گن پریشد اور بی پی ایف نے کیب کی حمایت کی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close