اپنا دیشتازہ ترین خبریں

شوپیان میں جنگجوﺅں کا پولیس گارڈ پوسٹ پر حملہ، 4اہلکار جاں بحق

جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان کے زینہ پورہ میں منگل کے روز جنگجوﺅں نے ریاستی پولیس کے گارڈ پوسٹ پر حملہ کرکے چار اہلکاروں کو ہلاک کردیا۔ جنگجو سبھی چار پولیس اہلکاروں کی سروس رائفلیں چھین کر لے گئے ہیں۔

جنگجو تنظیم جیش محمد نے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔ مہلوک پولیس اہلکاروں کی شناخت کانسٹیبل معراج الدین ساکنہ اجس بانڈی پورہ، کانسٹیبل حمید اللہ ساکنہ فتح پورہ اننت ناگ، کانسٹیبل انیس احمد ساکنہ سوچھ کولگام اور عبدالمجید ساکنہ شالہ بل گاندربل کے طور پر ہوئی ہے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جنگجوﺅں کے ایک گروپ نے منگل کو دوپہر کے وقت زینہ پورہ میں اقلیتی کیمونٹی کی حفاظت کے لئے قائم پولیس کے گارڈ پوسٹ پر اندھا دھند فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں تین پولیس اہلکاروں کی موقع پر موت واقع ہوئی جبکہ چوتھا ایک شدید طور پر زخمی ہوا۔ انہوں نے بتایا کہ زخمی پولیس اہلکار کو فوری طور پر مقامی اسپتال لے جایا گیا جہاں سے انہیں سری نگر کے اسپتال منتقل کیا گیا۔ تاہم وہ سری نگر کے اسپتال پہنچائے جانے سے قبل ہی دم توڑ گیا۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ حملہ آور جنگجو مارے گئے سبھی چار پولیس اہلکاروں کی سروس رائفلیں چھین کر لے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ علاقہ کو محاصرے میں لیکر تلاشی کاروائی شروع کی گئی ہے۔ جنگجو تنظیم جیش محمد نے حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ جیش محمد نے چھینی گئی رائفلوں کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل کردی ہے۔ دریں اثنا سابق وزرائے اعلیٰ عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی نے شوپیان حملے کی مذمت کی ہے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close