تازہ ترین خبریںدلی این سی آر

قومی شہریت قانون: شاہین باغ خواتین مظاہرین کی حمایت میں پہنچے یوگندر یادو

قومی شہریت قانون، قومی شہری رجسٹر اور قومی آبادی رجسٹر کے خلاف شاہین باغ میں خواتین مظاہرین کی حمایت کرتے ہوئے سوراج ابھیان کے صدر یوگیندریادو نے کہا کہ میں یہاں ملک اور آئین کو بچانے کے لئے یہاں آیا ہوں۔ یہ بات انہوں نے شاہین باغ خواتین مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے خواتین کے جذبے کو سلام کرتے ہوئے کہاکہ خواتین آئین کی حفاظت کے لئے اس سخت سردی کے موسم میں آرام و آسائش کو چھوڑ کر دن رات کا دھرنا دے رہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ خواتین کا یہ جذبہ پورے ملک کے لئے ایک مثال ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج کا وقت ملک کو بچانے کا ہے اور میں بھی آپ لوگوں کے درمیان ہندوستان کو اور اس کے آئین کو بچانے کے لئے آیا ہوں۔

کل ہند مسلم یوتھ فورم کے سرپرست ٹی ایم ضیاء الحق نے مظاہرہ میں شرکت کرتے ہوئے کہا کہ شاہین باغ کا خواتین مظاہرہ پوری دنیا کو پیغام دیا ہے کہ یہاں کی خواتین کسی طرح بھی اپنے حقوق اور ملک کے آئین کی حفاظت میں کسی سے پیچھے نہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کا یہ نہ صرف جابرانہ ہے بلکہ ملک کے لئے تباہ کن بھی ہے اور یہ صرف مسلمانوں کے خلاف ہی نہیں ہے بلکہ ہندوؤں کے بھی خلاف ہے۔پیپلز ہوپ کے چیرمین رضوان احمد نے خواتین کے مظاہرے کو ظلم و جبر اور آئین کے حق میں جنگ کو ایک مثال قرار دیتے ہوئے کہاکہ بغیر کسی رہنمائی اور بغیر کسی انتظام کے 18دن سے مظاہرہ کرنا یہ ظاہر کرتا ہے کہ جب وہ اپنی طاقت دکھانے پر آجائے تو کوئی اس کا مقابلہ نہیں کرسکتا۔

انہوں نے کہاکہ حکومت کا یہ کہناکہ یہ مسلمانوں کے خلاف نہیں ہے، غلط ہے اور یہ صرف مسلمانوں کے لئے ہی نہیں بلکہ ہندوؤں کے لئے بھی اتنا ہی نقصان دہ ہے۔ غریب طبقہ، ایس سی، ایس ٹی اور بنجارہ بھی اس کی زد میں آئیں گے۔ وہاں کا نظام دیکھنے والی صائمہ خاں نے بتایا کہ گزشتہ کل رات کے مظاہرے میں مشہور سماجی کارکن، مصنف اور سابق آئی اے ایس افسر ہرش مندر، فلمی اداکارہ سورا بھاسکر، کانگریس لیڈر سندیپ دکشت‘ ایم یل اے امانت اللہ خاں اور دیگر سماجی شخصیات نے حصہ لیا۔

اس کے علاوہ جامعہ ملیہ اسلامیہ، جواہر لال نہرو یونیورسٹی، دہلی یونورسٹی کے علاوہ دہلی کے سماجی کارکنان، ہندہ، سکھ، عیسائی اور سماج کے دیگر طبقے کے لوگوں نے اس مظاہرہ میں شرکت کی۔ انہوں نے کہاکہ دن رات کے مظاہرے میں حال ہی میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف آئی جی کے عہدے سے استعفی دینے والے عبد الرحمان،فلمی ہستی ذیشان ایوب، بارکونسل کے ارکان، وکلاء، جے این یو کے پروفیسر، سیاست داں سریشٹھا سنگھ، الکالامبا، ایم ایل اے امانت اللہ خاں، سابق ایم ایل اے آصف محمد خاں، بھیم آرمی کے سربراہ چندر شیکھر آزاد، سماجی کارکن شبنم ہاشمی، پلاننگ کمیشن کی سابق رکن سیدہ سیدین حمید، وغیرہ نے اب تک شرکت کرکے ہمارے کاز کی حمایت کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ آگے بھی ملک کی اہم شخصیت کی شرکت کی توقع ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close