تازہ ترین خبریںدلی نامہ

سکھ مخالف فسادات: خودسپردگی کے بعد سجن کمار کو منڈولي جیل بھیجا گیا

سابق وزیر اعظم اندرا گاندھی کے قتل کے بعد بھڑکنے والے سکھ مخالف فسادات کے ایک واقعہ میں عمر قید کی سزا پانے والے سابق ایم پی سجن کمار نے پیر کے روز کڑکڑڈوما عدالت میں آج خودسپردگی کردی۔

سجن کمار نے میٹروپولیٹن مجسٹریٹ ادیتی گرگ کی عدالت میں خود سپردگی کی ۔ جج آدیتی گرگ نے انہیں منڈولي جیل بھیجنے کا حکم دیا۔ سجن کمار نے عرضی دائر کی تھی کہ انہیں ہائی سکیورٹی والی تہاڑ جیل میں رکھا جائے لیکن عدالت نے اسے قبول نہیں کیا۔ تاہم، عدالت نے ان کی سلامتی کی عرضی قبول کرتے ہوئے پولیس کو ہدایت دی کہ انہیں الگ گاڑی سے جیل لے جایا جائے۔ تہاڑ جیل بھیجنے کی ان کی درخواست مسترد کرتے ہوئے جج نے کہا کہ قوانین کے مطابق ان کو منڈولي جیل بھیجا جا رہا ہے۔

دہلی ہائی کورٹ نے 17 دسمبر کو سکھ مخالف فسادات میں پانچ افراد کے قتل کے معاملے میں 73 سالہ سجن کمار سمیت دیگر کئی لوگوں کو سزا سنائی تھی۔ سجن کمار نے خاندانی ذمہ داری کو پورا کرنے کے لئے دہلی ہائی کورٹ سے خود سپردگی کرنے کی تاریخ ایک ماہ بڑھانے کی درخواست دائر کی تھی جسے عدالت نے مسترد کردیا تھا۔

سزا کے خلاف سابق ممبر پارلیمنٹ نے سپریم کورٹ میں بھی اپیل کی لیکن عدالت میں یکم جنوری تک موسم سرما کی تعطیل ہونے کی وجہ سے ان کی عرضی پر سماعت نہیں ہوسکی اور انہیں عدالت میں خودسپردگی کرنی پڑی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close