اپنا دیشتازہ ترین خبریں

سپریم کورٹ پہنچی کرناٹک کی جنگ

نئی دہلی، (پی این این )
کر ناٹک میں سیاسی بحران جا ری ہے۔ اس درمیان برسراقتدار جے ڈی ایس ۔کانگریس گٹھ بندھن کے 14 ارکان اسمبلی کے استعفیٰ کا معاملہ اب سپریم کورٹ پہنچ گیا ہے۔ 10 باغی ارکان اسمبلی نے الزام لگایا ہے کہ کرناٹک اسمبلی اسپیکر کے آر رمیش کمار جان بو جھ کر ان کے استعفی منظور نہیں کر رہے ہیں ۔باغی ارکان اسمبلی کی طرف سے سابق اٹارنی جنرل اور سینئر وکیل مُکُل روہتگی نے ملک کے چیف جسٹس رنجن گگوئی کے سامنے معاملہ میں بدھ کو بلا تاخیر سماعت کی درخواست کی۔

عدالت میں سی جے آئی اور سابق اٹارنی جنرل کے درمیان اس معاملہ پر پُرزور بحث بھی ہوئی۔ روہتگی نے چیف جسٹس سے کہا کہ اسمبلی اسپیکر جان بو جھ کر کوئی کارروائی نہیں کر رہے ہیں۔ اس لئے معاملہ پر آج یا کل بلا تاخیر سماعت کریں۔ انہوں نے کہا یہ وقت بہت قاتل ہے۔ تب چیف جسٹس نے پو چھا آپ اسے کب چاہتے ہیں؟ اس کے جواب میں روہتگی نے کہا آج یا کل۔

واضح ہو کہ ہفتہ کو جے ڈی ایس ۔کانگریس گٹھ بندھن کے 11 ارکان اسمبلی نے اچا نک استعفی دے دیا تھا۔ اسپیکر کے نہیں ملنے کے بعد یہ سبھی ارکان اسمبلی گورنر سے ملے اور پھر خصوصی چارٹرڈ طیارے سے ممبئی چلے گئے ۔ان میں تین ارکان اسمبلی جے ڈی ایس سے تھے جبکہ 8ارکان اسمبلی کانگریس کے تھے ۔کچھ دن پہلے بھی کانگریس کے دو ارکان اسمبلی استعفی دے چکے تھے ۔ہفتہ کے بعد پیر کو بھی ایک رکن اسمبلی نے استعفی دے دیا۔ اس طرح کُل 14 ارکان اسمبلی نے استعفی دے دیا ہے۔

دریں اثنا کرنا ٹک کانگریس کے باغی ارکان اسمبلی کو منانے پہنچے کانگریس کے ڈی کے شیو کمار کو ممبئی پو لیس کے ذریعہ جبراً واپس بنگلورو بھیجا جا رہا ہے۔ پولیس انہیں لے کر ہوا ئی اڈہ جا رہی ہے۔ سینئر کانگریس لیڈر ملنِد دیوڑادفتر کی طرف سے ملی خبر کے مطابق ملند دیوڑا اور دوسرے کانگریس لیڈروں کو رہا کر دیا گیا ہے۔

اس سے پہلے ممبئی پو لیس نے منگل کی دو پہر کو پو ئی کے ہوٹل کے باہر سے ڈی کے شیو کمار کو حراست میں لیا تھا۔ اسی ہو ٹل میں کانگریس ۔جے ڈی ایس کے با غی ارکان اسمبلی ٹکے ہو ئے ہیں۔ باغی ارکان اسمبلی نے ڈی کے شیو کمار سے اپنی جان کا خطرہ بتاتے ہوئے پولیس سے سیکورٹی مانگی تھی۔ کشیدگی کو دیکھتیہو ئے ہو ٹل کے آس پاس کے علاقہ میں دفعہ 144 لگا دی گئی تھی۔ شیو کمار با غی ارکان اسمبلی سے ملے بغیر وہاں سے جا نے کو تیار نہیں تھے۔ وہ تقریباً ساڑھے چھ گھنٹے ہو ٹل کے باہر بیٹھے رہے۔ آخر کار پولیس نے انہیں ڈھائی بجے حراست میں لے لیا۔

واضح ہو کہ کرناٹک میں چل رہی سیاسی ہلچل کے بیچ سی ایم ایچ ڈی کمار سوامی کے منگل کا دن کچھ راحت لے کر آیا تھا۔ اسمبلی اسپیکر کے آر رمیش کما ر نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ 13 ارکان اسمبلی کے استعفی کے معاملہ کو دیکھنے کے لئے کم سے کم 6 دن کا وقت لیں گے ۔استعفی دینے والوں میں 10کانگریس اور 3 جے ڈی ایس کے ہیں ۔اسپیکر کا کہنا ہے کہ انہیں صرف پانچ ارکان اسمبلی کے استعفی ہی صحیح فارمیٹ میں ملے ہیں۔

اسپیکر رمیش کمار نے 14 میں سے آٹھ ارکان اسمبلی کو اپنے موقف میں پختگی نہ ہو نے پر رابطہ کرنے کو کہا ہے۔ دوسری جا نب کانگریس لیڈر ڈی کے شیو کمار ممبئی کے اس ہوٹل کے باہر بیٹھے ہیں جہاں با غی ارکان اسمبلی ٹھہرے ہوئے ہیں۔ ممبئی پولیس نے اس ہو ٹل کے آس پاس دفعہ 144 لگا دی ہے اور ڈی کے شیو کمار کو ہو ٹل میں جانے سے روک دیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close