اپنا دیشتازہ ترین خبریں

سپریم کورٹ پہنچا حیدرآباد انکاؤنٹر معاملہ

حیدرآباد کے دشا عصمت دری قتل معاملے کے ملزمین کے پولیس تصادم میں مارے جانے کا معاملہ سنیچر کے روز سپریم کورٹ پہنچ گیا اور اس کی آزادانہ جانچ سے متعلق دو عرضیاں دائر کی گئیں۔ ایک عرضی دو وکیلوں جے ایس منی اور پردیپ کمار یادو نے اور دوسری عرضی وکیل منوہر لال شرما نے دائر کی ہے۔

پہلی عرضی میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ پولیس ٹیم کے سربراہ سمیت تصادم میں شامل سبھی پولیس اہلکاروں کے خلاف ایف آئی آر درج کرکے جانچ کرائی جانی چاہیے۔ اس پٹیشن میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہ جانچ سی بی آئی، ایس آئی ٹی، سی آئی ڈی یا کسی دیگر غیر جانب دار ایجنسی سے کرائی جائے، جو تلنگانہ حکومت کے تحت نہ ہو۔عرضی گزاروں نے اس بات کا مطالبہ کیا ہے کہ کیا تصادم کے سلسلے میں عدالت عظمی کی سال 2014 کی رہنما ہدایات پر عمل کیا گیا ہے یا نہیں؟

مسٹر شرما نے عدالت کی نگرانی میں خصوصی جانچ ٹیم سے جانچ کے ساتھ ساتھ ملزمین کے خلاف تبصرہ کرنے پر راجیہ سبھا کی رکن جیہ بچن اور دلی خاتون کمیشن کی صدر سواتی مالیوان کے خلاف کارروائی کی مانگ کی ہے۔ ایسے معاملوں میں شامل ملزمین کو عدالت سے قصوروار قرار دیئے جانے تک میڈیا میں بحث پر روک لگانے کے احکامات دینے کی بھی مانگ کی گئی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close