اپنا دیشتازہ ترین خبریں

سوپور میں مڈبھیڑ، لشکرکا جنگجو ڈھیر

جموں و کشمیر میں ضلع بارہ مولہ کے سوپور میں بدھ کے روز سکیورٹی فورسز کے محاصرے اور تلاشی مہم کے دوران ہوئے تصادم میں لشکر طیبہ کا مطلوبہ جنگجو مارا گیا جبکہ تین سکیورٹی اہلکار زخمی ہو گئے۔ ہلاک شدہ جنگجو کی تلاش سوپور کے پھل تاجر کے اہل خانہ پر حملے کے سلسلے میں کی جا رہی تھی۔ اس حملے میں ایک نابالغ سمیت چار افراد زخمی ہو گئے تھے۔

ریاستی پولیس کے ڈائریکٹر جنرل دلباغ سنگھ نے یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ جنگجو ؤں کی آمد کے سلسلے میں پختہ خفیہ اطلاعات کی بنیاد پر سوپور قصبے کے نزدیک پولیس نے ناکہ لگایا تھا۔ اس دوران ایک شخص کو روک کر اس سے پوچھ گچھ شروع کرنے کی کوشش کی لیکن اس نے الٹا ان پر ہینڈ گرینیڈ پھینک دیا۔ اس سے تین پولیس اہلکار زخمی ہو گئے۔ مسٹر سنگھ نے کہا کہ اس پر سکیورٹی فورسز نے جوابی کارروائی کی اور تھوڑی دیر تک دونوں اطراف سے ہوئی فائرنگ میں لشکر کا اعلیٰ کمانڈر آصف مقبول بھٹ مارا گیا۔ وہ گزشتہ ایک ماہ سے سوپور میں کافی سرگرم تھا۔

انہوں نے کہاکہ آصف پھل تاجر کے اہل خانہ کے افراد پر حملے کا اصل ملزم تھا۔ انہوں نے کہاکہ تاجر کے اہل خانہ پر حملے میں شامل دیگر ملزمان کو بھی جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔ آصف نے دیگر پھل فروشوں اور تاجروں کو بھی دھمکایا تھا اور سوپور منڈی میں ان کی دکانیں بند کرنے کی بھی دھمکی دی تھی۔ سوپور میں مختلف جنگجو تنظیموں کے آٹھ سرگرم کارکنوں کی گرفتاری کے سلسلے میں پوچھے جانے پر مسٹر سنگھ نے کہا کہ پولیس جنگجوؤں سے ہمدردی رکھنے والوں پر قریب سے نظر رکھ رہی ہے۔ گرفتار کارکنوں نے مقامی تاجروں کو اپنی دکانیں بند کرنے کی دھمکی دی تھی۔

انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ دیگر ثبوتوں کے ساتھ پولیس نے حال ہی میں ان سبھی کو گرفتار کر لیا ہے۔ پولیس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close