آئینۂ عالمتازہ ترین خبریں

سری لنکا میں منشیات کے اسمگلروں کو دی جائے گی سزائے موت

سری لنکا کے صدر میتری پالا سری سینا نے سال 2020 تک ملک کو نشہ سے پاک قرار دینے کے تئیں عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دو ماہ کے اندر قصوروار پائے جانے پر نشیلی اشیا کے تاجروں کے لئے موت کی سزا کا التزام کیا جائے گا۔

مسٹر سینا نے بدھ کو پارلیمنٹ میں بتایا گیا ہے کہ انہوں نے نشیلی اشیا کے خلاف شروع کی گئی مہم کے تحت قصوروار پائے جانے پر موت کی سزا کا التزام کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سے پہلے سری لنکا کے وزیر قانون تھلتھا اتوکورلے نے منگل کو پارلیمنٹ میں بتایا تھا کہ ان کی وزارت نے صدر سے نشیلی اشیا کے تاجروں کے لئے موت کی سزا کا التزام کی درخواست کی ہے اور گزشتہ سال اکتوبر میں اور اس سال جنوری کے آخر میں پانچ قصورواروں کے نام صدر کے پاس بھیجے گئے ہیں۔

سری لنکا میں حالانکہ سزا ئے موت قانونی ہے لیکن سال 1976 کے بعد سے کسی کو بھی موت کی سزا نہیں دی گئی ہے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close