آئینۂ عالمتازہ ترین خبریں

سری لنکا دھماکہ: آرمی چیف کا انکشاف، دہشت گردوں نے کیرالہ اور کشمیر میں لی تھی ٹرینگ

سری لنکا میں ایسٹر کے موقع پر ہوئے 8 سیریل بم دھماکوں سے ملک کو دہلا دینے والے خودکش دہشت گردوں کو لیکر ایک نیا خلاصہ ہوا ہے جس کے بارے میں بتایا جا رہا ہے کہ خودکش دہشت گردوں نے کشمیر اور کیرالہ میں ٹرینگ لی تھی۔ سری لنکا کے آرمی چیف اس تعلق سے بتایا کہ ان دہشت گردوں نے ٹرینگ لینے یا پھر دیگر دہشت گرد تنظیموں نے اپنے تعلقات کو مضبوط کرنے کے لئے ہندوستان کی ان دونوں ریاستوں کا دورہ کیا تھا۔ حملوں کے بعد یہ پہلا ایسا موقع ہے جب سری لنکا کے کسی سیکورٹی افسر نے سرکاری طور پر یہ اعتراف کیا ہوکہ دہشت گردوں نے ہندوستان کا دورہ کیا تھا.

بتا دیں کہ اس تعلق ایسا بھی کہا جا رہا ہے کہ ہندوستان نے حملوں سے کچھ دن پہلے سری لنکا کو اس بارے میں کچھ معلومات دی تھی۔ یاد رہے کہ ایک خاتون سمیت 9 خودکش حملہ آوروں نے 3 گرجا گھروں اور 3لگزری ہوٹلوں کو نشانہ بناتے ہوئے دھماکے کئے تھے۔ جس میں 253 لوگ مارے گئے تھے جبکہ 500 سے زیادہ لوگ زخمی ہوئے تھے۔ جس کی ذمداری دہشت گرد تنظیم داعش نے لی ہے. جس سے منسلک تقریباً 100 لوگوں کو پولیس نے گرفتار بھی کیا ہے.

بی سی سی کو دیئے انٹرویو میں آرمی لیفٹیننٹ جنرم مہیش نے دہشت گردوں کے انٹرنیشنل لنکس اور دیگر چیزوں کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ وہ ہندوستان گئے تھے، انہوں نے کشمیر، بنگلورو اور کیرل کا سفر کیا تھا۔ ہمارے پاس اس سلسلے میں معلومات دستیاب ہے۔ کشمیر اور کیرل میں دہشت گردوں کی سرگرمیوں کے سلسلے میں پوچھے جانے پر سری لنکا کی فوج کے سربراہ نے کہا ان کی سرگرمیوں کے بارے میں واضح نہیں ہے لیکن یقینی طور پر وہ کچھ تربیت یا پھر ملک سے باہر کے دہشت گرد تنظیموں سے رابطہ قائم کرنے کے مقصد سے گئے تھے۔

جس کے بعد سری لنکائی حکومت نے کچھ سخت قدم اٹھاتے ہوئے ملک میں مدرسوں کو وزارت براے مذہبی و تہذیبی امور کے تحت چلانے کا فیصلہ کیا ہے. جب کہ اس سے پہلے مدرسے محکمہ تعلیم کے تحت چل رہے تھے، اس کے علاوہ ملک میں چہرہ ڈھکنے پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔‘‘

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close