اپنا دیشتازہ ترین خبریں

سابق کمشنر راجیو کمار کا ہو سکتا ہے قتل: کانگریس

کانگریس کی مغربی بنگال یونٹ نے ہزاروں کروڑ روپے کے شاردا معاملے میں ثبوتوں کو مٹانے کے ملزم کولکاتہ پولیس کے سابق کمشنر راجیو کمار کے قتل کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔ ریاستی کانگریس صدر سومین مترا نے کہا ہے کہ راجیو کمار شاردا چٹ فنڈ کیس میں پیسے کھانے والوں کے سب سے بڑے رازدار ہیں۔ ان کی گرفتاری ہونے پر کئی بڑے جیل میں ہوں گے، اسی لیے ان کا قتل بھی کرایا جا سکتا ہے۔

ہفتہ کو کولکاتہ میں سومین نے کہا کہ چٹ فنڈ کیس کی تحقیقات کے لئے جس خصوصی تفتیشی ٹیم (ایس آئی ٹی) تشکیل دی گئی تھی اس کے سربراہ راجیو کمار تھے۔ وہ جانتے ہیں کہ شاردا چٹ فنڈ کیس میں کس نے کتنے روپے لئے۔راجیو کی گرفتاری سے حکمراں پارٹی پر دباؤ بنے گا۔ کہیں راجیو راج نہ کھول دیں، اس خوف سے ان کا قتل کرایا جا سکتا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ چٹ فنڈ معاملے کی تحقیقات کے لئے ودھان نگر کے اس وقت کے پولیس کمشنر راجیو کمار کی قیادت میں 2013 میں ایس آئی ٹی کی تشکیل کی گئی تھی۔ انہی کی نگرانی میں اپریل 2013 میں جموں کشمیر کے سونمارگ سے شاردا چیف سدی پت سین اور ان کی خاتون ساتھی دیوجانی کی گرفتاری ہوئی تھی۔ ان کے پاس سے مبینہ طور پر ایک سرخ ڈائری اور لیپ ٹاپ برآمد ہوئے تھے جن میں ان لوگوں کا نام تھا جنہوں نے چٹ فنڈ کمپنی سے کروڑوں روپے رشوت لئے تھے۔

دعویٰ ہے ان میں حکمراں ترنمول کانگریس کے لیڈروں کا نام تھا۔ الزام ہے کہ کمار نے ان ثبوتوں کو مٹا دیا تھا تاکہ حکمراں پارٹی کے ان رہنماؤں کو بچایا جا سکے۔ 2014 میں سپریم کورٹ کی ہدایت پر جب سی بی آئی نے چٹ فنڈ کی جانچ کی تو ایس آئی ٹی جانچ کے دوران سامنے آئے تمام حقائق اور ثبوتوں کو سی بی آئی کو سونپا گیا لیکن وہ ڈائری اور لیپ ٹاپ آج تک سی بی آئی کو نہیں مل سکا ہے۔ اسی وجہ سے سی بی آئی کمار کو گرفتار کرنا چاہتی تھی اور گزشتہ ایک ہفتے سے وہ آزاد گھوم رہے ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close