بہار- جھارکھنڈ

ریمس میں ہی چلے گا لالو پرساد یادو کا علاج، نہیں بھیجے جائیں گے ایمس

مشہور اربوں روپے کے چارہ گھوٹالہ معاملے میں سزا یافتہ راشٹریہ جنتادل (آرجے ڈی) صدر اور بہار کے سابق وزیراعلیٰ لالو پرساد یادو کی مختلف بیماریوں سے متعلق جانچ رپورٹ کا آج جائزہ لینے کے بعد آٹھ رکنی میڈیکل ٹیم نے ان کا علاج رانچی کے راجندر انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنس میں ہی چلنے دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

آر آئی ایم ایس کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ویویک کشیپ نے یہاں بتایاکہ میڈیکل ٹیم نے مسٹر یادو کے علاج سے متعلق سبھی جانچ رپورٹ کا جائزہ لینے کے بعد فیصلہ لیا ہے کہ ان کا علاج ٹھیک سے چل رہا ہے۔ انہوں نے بتایاکہ آر جے ڈی صدر کی اہم بیماری کڈنی سے متعلق ہے اور آر آئی ایم ایس میں گردہ امراض کے ڈاکٹر ( نیفرولوجسٹ) دستیاب نہیں ہونے کی وجہ سے اب بیماری کے کسی ماہر کو باہر سے بلاکر یا پھر مسٹر یادو کو ان کے پاس بھیج کر مشورہ لیا جائے گا۔

مسٹر کشیپ نے کہاکہ اگر ماہر نیفرو لوجسٹ نے کہاکہ آر آئی ایم ایس میں مسٹر یادوکا علاج صحیح نہیں چل رہا ہے اور انہیں دہلی کے آل انڈیا انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنس بھیجا جانا چاہئے تب اس پر غور کیا جائے گا۔ فی الحال میڈیکل ٹیم کی رپورٹ کے مطابق مسٹر یادو کا علاج راجندر انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنس میں ہی چلے گا۔

آرجے ڈی صدر کا علاج کر رہے آرآئی ایم ایس کے یونٹ انچارج پروفیسر ڈاکٹر امیش پرساد نے اس سال 18 فروری کو آرآئی ایم ایس انتظامیہ کو خط لکھ کر میڈیکل بورڈ تشکیل کرنے کی درخواست کی تھی۔ خط میںکہا گیا تھا کہ مسٹر یادو کا آرآئی ایم ایس میں گذشتہ ڈیڑھ سال سے علاج چل رہا ہے۔ کورٹ نے کہاتھاکہ صحت کا جائزہ لینے کی ضرورت محسوس ہوتی ہے تو انہیں وہا ں بھیجا جاسکتاہے۔

واضح رہے کہ سابق وزیر اعلیٰ مسٹر یادو دسمبر 2017 سے رانچی کی برسا منڈا جیل میں بند ہیں۔ بیماری ہونے کی وجہ سے ان کا علاج آرآئی ایم ایس میں پے انگ وارڈ میں کیا جا رہا ہے۔ گذشتہ سترہ مارچ کو ان کی طبیعت خراب ہونے پر آر آئی ایم ایس اور پھر انہیں دہلی کے ایمس میں داخل کرایا گیا۔ عدالت نے انہیں گیارہ مئی 2019 کو علاج کے لئے چھ ہفتے کی ضمانت منظور کی تھی۔ اسے بڑھا کر 14 اور پھر 27 اگست کیا گیا۔ اس کے بعد عدالت نے 30 اگست کو مسٹر یادو کو عدالت میں خود سپردگی کرنے کی ہدایت دی تھی۔ اس کے بعد سے وہ آرآئی ایم ایس میں ہی زیر علاج ہیں۔

آرجے ڈی صدر ذیابیطیس، ہائی بلڈ پریشر، امراض قلب، کرانک کڈنی ڈیزز (اسٹیج تھری)، فیٹی لیور، پیرے نل انفیکشن، ہائی پر یوری سیمیا، کنڈنی اسٹون، فیٹی ہیپو ٹائی ٹیس، پروسٹیٹ جیسی بیماریوں میں مبتلا ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close