تازہ ترین خبریںدلی نامہ

دہلی: گندے پانی پر سیاست تیز، کیجریوال پاسوان آمنے سامنے

دہلی میں پینے کے پانی پر آئی رپورٹ پر فوڈ اور صارفین امور کے مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان پر حملہ کرتے ہوئے وزیراعلی اروند کیجریوال نے کہاکہ راجدھانی میں پانی کا معیار کافی بہتر ہے اور اس پر سیاست نہیں کی جانی چاہئے۔

مسٹر کیجریوال نے پیر کو پریس کانفرنس میں مسٹر پاسوان کی طرف سے جاری گزشتہ ہفتہ ایک رپورٹ کی بنیاد پر دہلی میں پانی کی کوالٹی کے نہایت خراب اور اسے پینے کے لائق نہیں بتانے پر انہیں چیلنج کیا اور کہاکہ پانی پر سیاست نہیں کی جائے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ فی الحال دہلی میں ہوا کے معیار میں بہتری نظر آرہی ہے اور اوڈ-ایون کو آگے بڑھانے کی ضرورت نہیں ہے۔ دہلی حکومت نے آلودگی کے پیش نظرچار نومبر سے 15نومبر تک اوڈ-ایون نافذ کیا تھا۔

راجدھانی میں پینے کے پانی سے متعلق مرکزی حکومت کی حالیہ رپورٹ پر مسٹر کیجریوال نے کہاکہ پانی پر سیاست کی جارہی ہے۔ محض 11مقامات کے نمونوں کی بنیاد پر پورے شہر کے پانی کو خراب نہیں کہا جاسکتا ہے۔ نمونے کہاں سے لئے گئے ہیں، اس کی اطلاع نہیں دی جا رہی ہے۔ جل بورڈ کی رپورٹ میں محض دو فیصد سے بھی کم نمونے کھرے نہیں اترے ہیں۔ دہلی میں بڑی تعداد میں پانی کے نمونے لیکر انکی جانچ کی جائے گی، مسٹر پاسوان کو ان کا چیلنج ہے کہ وہ بھی آئیں اور جانچ کریں کہ راجدھانی کا پانی صاف ہے یا نہیں۔

مرکزی حکومت نے گزشتہ ہفتہ ایک تحقیقاتی رپورٹ جاری کی تھی۔ یہ تحقیق 21 شہروں کے پینے کے پانی کے تعلق سے تھی جس میں دہلی کا پانی سب سے خراب اور ممبئی کا سب سے اچھا بتایا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ دہلی حکومت نے ڈھائی لاکھ کنبوں کے لئے آج ایک بہت بڑا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے تحت ہزاروں کروڑ روپے کی سرمایہ کاری سے دہلی میں ہزاروں کلومیٹر لمبی سیور لائن ببچھائی گئی ہیں۔ اب ان علاقوں میں 31 مارچ تک درخواست دینے پر پوری طرح مفت کنکشن دیا جائے گا۔ دہائیوں سے ان کالونیوں میں حکومت نے سیور لائنیں تک نہیں بچھائی تھیں۔ دہلی کے لاکھوں لوگوں کو بنیادی سہولیات سے محروم رکھنے کی وجہ سے جمنا میں آلودگی کی سطح بڑھ گئی۔ اب لوگوں کو سہولیات بھی ملیں گی اور جمنا صاف بھی ہوگی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close