تازہ ترین خبریںدلی نامہ

دہلی میں انتخابی جنگ شروع، ’آپ‘ اور ’بی جے پی‘ نے جلائے ایک دوسرے کے انتخابی منشور

دہلی کو مکمل ریاست بنانے کےلئے جان بھی دینی پڑی تو دیں گے: کجریوال

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
عام انتخابات 2019 کا انتخابی بگل بجتے ہی سیاسی اور انتخابی جنگ چھڑ گئی ہے۔ جہاں بی جے پی کو شکست دینے کےلئے کانگریس کی تیاری جاری ہے، وہیں دہلی میں برسر اقتدار عام آدمی پارٹی دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دلانے کو انتخابی موضوع بنا کر اپنے لاؤ لشکر کے ساتھ امت شاہ اور مودی کے خلاف بی جے پی کو اقتدار سے ہٹانے کےلئے انتخابی میدان میں اتر گئی ہے۔ دہلی میں جاری سیاسی گہما گہمی کے چلتے آج عام آدمی پارٹی اور بی جے پی نے ایک دوسرے کے انتخابی منشور کو نذر آتش کیا۔ جہاں آج عام آدمی پارٹی نے بی جے پی کے 2014 منشور کو نذر آتش کیا تو وہیں بی جے پی نے بھی ’آپ‘ کے منشور کو آگ کے حوالے کیا۔

آج عام آدمی پارٹی کے کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دیئے جانے کے لئے بی جے پی کے منشور کو جلایا۔ اروند کیجریوال کے ساتھ ان کی کابینہ کے وزراء نائب وزیر اعلی منش سسودیا، گوپال رائے، عمران حسین، راجندر پال گوتم، کیلاش گہلوت اور ستیندر جین بھی بی جے پی کے منشور کی کاپیاں جلائیں۔

دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دیئے جانے کو انتخابی موضوع بنا کر لڑ رہی عام آدمی پارٹی کے کنوینر وزیر اعلی اروند کیجریوال نے بی جے پی کو دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دیئے جانے کےلئے گھیرتے ہوئے کہا کہ اگر بی جے پی والے آنجہانی اٹل بہاری واجپئی کا احترام کرتے ہیں تو پھر دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دلانا ہو گا۔ وزیراعلی اروند کجریوال نے وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم مودی کے والد نے ملک کے لئے قربانی نہیں دی بھگت سنگھ، اشفاق الله خان، سکھ دیو اور راج گرو جیسے محبان وطن نے ملک کےلئے قربانی دی ہے۔ کجریوال نے کہا کہ دہلی کو مکمل ریاست بنانے کے مطالبے کےلئے انہیں اگر اپنی جان بھی دینی پڑی تو وہ تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس لوک سبھا انتخابات میں ملک کے آئین کی حفاظت کےلئے مودی اور امت شاہ کی جوڑی کو ہرانا بیحد ضروری ہے۔

وہیں دوسری جانب بی جے پی کے لیڈر اور رکن پارلیمنٹ وجے گوئل کی قیادت میں عام آدمی پارٹی کا منشور جلایا گیا۔ انہوں ںے کہا کہ عام آدمی پارٹی نے اپنے انتخابی وعدوں کو پورا نہیں کیا ہے۔ نہ تو اسپتال، نہ ہی اسکول بنے اور نہ ہی دہلی میں سی سی ٹی وی کیمرے بھی کہیں نہیں لگے ہیں۔ کجریوال نے 70 وعدے کئے، لیکن ایک بھی پورا نہیں کیا۔ گوئل نے یہ بھی کہا کہ ہم اس بار کجریوال کے جھوٹے وعدوں کی ہولی جلائیں گے۔

ٹیگز
اور دیکھاو

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close