تازہ ترین خبریںدلی نامہ

دہلی میں ہیلتھ ایمرجنسی جیسے حالات، فضائی آلودگی خطرناک سطح پر

ایک بار پھر دہلی قومی دارالحکومت خطے کو فضائی آلودگی نے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے، جس کی وجہ سے دہلی این سی آر میں رہنے والے لوگوں کو سانس لینے اور آنکھوں میں جلن ہونے کے مسئلے سے دو چار ہونا پڑ رہا ہے۔ جس کا سب سے زیادہ شکار بچے ہو رہے ہیں.

اس سے پہلے راجدھانی دہلی، گروگرام، نوئیڈا، گریٹر نوئیڈا، غازی آباد اور اس کے آس پاس کے علاقوں میں دیوالی کے وقت ہوئی آتش بازی اور پرالی جلانے سے شہر میں فضائی آلودگی کی سطح ’انتہائی سنگین‘ پوزیشن میں پہنچ گئی تھی۔ اگرچہ کچھ دنوں کے بعد سے آلودگی میں کمی درج کی جانے لگی تھی۔

دہلی قومی دارالحکومت علاقہ کا ایئر کوالٹی انڈیکس سنگین حالات سے لے کر خطرناک صورتحال کے درمیان درج ہوتا رہا۔ ایئر کوالٹی انڈیکس کے اعداد و شمار کے مطابق جمعرات کو دہلی کے لودھی روڈ میں صبح کے وقت پی ایم 2.5 اور پی ایم 10 دونوں سطح 500 درج کیا گیا۔ معیار کے مطابق ہوا میں پی ایم 2.5 کی سطح 60 اور پی ایم 10 کی سطح 100 کے نیچے رہنی چاہئے، جبکہ مرکزی آلودگی کنٹرول بورڈ (سی پی بی سی) کے مطابق دہلی کے آر ٹی او علاقے میں ہوا کے معیار کی سطح 474 درج کی گئی۔

دہلی قومی دارالحکومت خطہ میں ہوا میں آلودگی کی سطح بدھ کو بھی زیادہ ریکارڈکی گئی۔ منگل کو دہلی ایئر کوالٹی انڈیکس 452 تک پہنچ گیا تھا جو سنگین سمجھا جاتا ہے۔ سی پی بی سی کے مطابق بدھ کو ملک کا سب سے آلودہ شہر غازی آباد رہا، جہاں پر ایئر کوالٹی انڈیکس 483 رہا۔ دہلی کی بات کریں تو یہاں پر ایئر کوالٹی انڈیکس 467 درج کیا گیا۔ ’سفر‘ نے بتایا ہے کہ اگلے 15 نومبر تک دہلی این سی آر کی ہوا میں آلودگی کی سطح ایسا ہی رہے گی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close