تازہ ترین خبریںدلی نامہ

دہلی میں 5 سے زیادہ لوگوں کے جمع ہونے کی ممانعت

’جنتا کرفیو‘ میں 50 فیصڈ بسیں اور میٹرو رہیں گی بند: کجریوال ....... *72 لاکھ لوگوں کو مفت راشن، معزور، بیوا ور بزرگوں کی پنشن دوگنی ٭کورونا وائرس کے چلتے لاک ڈاؤن کی طرف دہلی

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
کرونا وائرس جیسی مہاماری سے نبرد آزماں ہندوستان میں اس وباء کو شکست دینے اور بچاؤ کی کوششوں کے چلتے راجدھانی دہلی میں اب پانچ سے زیادہ لوگوں کے جمع ہونے کی ممانعت کر دی گئی ہے۔ پہلے یہ تعداد 200 پھر 50 اس کے بعد 20 اور اب 5کر دی گئی ہے۔

دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال نے آج کورونا وائرس سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر کے تحت یہ اعلان کیا۔ وزیر اعلی نے اس کے ساتھ ہی 72 لاکھ لوگوں کو مفت راشن دینے اور معزور، بیوا اور بزرگوں کی پنشن دوگنی دینے کا بھی اعلان کیا۔ وہیں ملک بھر میں کورونا کے وائرس سے بچاؤ کے لئے وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے اتوار کے روز عوام سے ’جنتا کرفیو‘ نافذ کرنے کی اپیل بھی کی گئی ہے۔ کیوںکہ ملک بھر میں مہاراشٹر اور کیرالہ کے بعد اب راجدھانی دہلی میں کورونا کے سب سے زیادہ کیس سامنے ا ٓرہے ہیں۔ اس وبا سے نمٹنے کیلئے مرکزی اور ریاستی حکومت کی جانب سے بہتر اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ لیکن دہلی کو معاشی اور تجارتی طور بڑا نقصان ہو رہا ہے۔ جس کے چلتے کجریوال حکومت نے مالی امداد دینے کے بھی اعلان کئے ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ کورونا وائرس کے سبب اتوار 22 مارچ کو جنتا کرفیو کے دوران 50 فیصد بسیں اور تمام میٹرو نہیں چلیں گی۔

وزیر اعلی نے اعلان کیا کہ کورونا وائرس کی وباء کی اثرات کو دیکھتے ہوئے راجدھانی دہلی میں پانچ سے زیادہ افراد جمع ہونے کی پاندی ہے۔ اگر پانچ لوگ ایک جگہ جمع بھی ہوتے ہیں تو وہ ایک میٹر کی دوری بنائے رکھیں۔ کجریوال نے کہاکہ مزدوری کے سبب روزانہ مزدوری کرنے والے مزدوروں کو زیادہ پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ان کے سامنے معاشی بحران آ رہا ہے۔ دہلی میں سرکاری راشن کا فائدہ اٹھانے والے 72 لاکھ افراد کو ڈیڑھ گنا، ساڑے سات کلو مفت راشن دیا جائے گا، پہلے یہ مقدار 5 کلو تھی۔

انہوں نے کہا کہ نائٹ شیلٹروں میں رہنے والے بے گھر افراد کو دوپہر اور رات کا کھانا فراہم کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ بزرگ، بیوہ اور معذور افراد کی پنشن دوگنی ہوجائے گی۔ وزیر اعلی نے یہ بھی اپیل کی کہ لوگ صبح کی سیر نہ کریں اور گھر پر ہی رہیں۔ وزیر اعلی نے کہا کہ ہم دہلی میں لاک ڈاؤن نہیں کر رہے ہیں لیکن اگر آپ کی بہتری کیلئے مستقبل میں کبھی لاک ڈاؤن کرنا پڑا تو کریں گے۔

واضح رہے کہ کورونا وائرس کی وباء سے بچاؤ کیلئے دہلی حکومت اور مرکزی حکومت کی کوششوں کے چلتے تمام تعلیمی ادارے اسکول، کالج، یونیورسٹی، کو چنگ سینٹر، ٹیوشن سینٹرس، مالس، سنیما گھر، سیاحتی مقامات بند کر دئے گئے ہیں۔ سرکاری اور غیر سرکاری دفاتر میں ضروری کام کیلئے ملازمین کو بلایا جا رہا ہے، لوگوں کے جمع ہونے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ لوگوں کو اس سلسلے میں بیدار کیا جا رہا ہے۔

یہاں بتادیں کہ کورونا وائرس کے پیش نظر وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے جنتا کرفیو کی اپیل کی گئی ہے۔ جس سے قبل آج راجدھانی دہلی میں تمام بڑے تجارتی مراکز اور مارکیٹ بند رہیں۔ دہلی کے اہم تجارتی کشمیری گیٹ موٹر پارٹس مارکیٹ، مراکز کھاری باؤلی، صدر بازار، آزاد مارکیٹ، گاندھی نگر، چاندنی چوک، لاجپت رائے مارکیٹ، دریا گنج سمیت دہلی کے دیگر بازار وں میں آج تقریباً شٹ ڈاؤن رہا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close