تازہ ترین خبریںدلی نامہ

دہلی میں ’آپ‘ سے اتحاد نہیں کرے گی کانگریس: شیلا دکشت

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
دہلی پردیش کانگریس کمیٹی کی صدرشیلا دکشت نے آج کہا کہ لوک سبھا انتخابات میں عام آدمی پارٹی سے کانگریس کوئی اتحاد نہیں کرے گی، وہ اپنے طور پر ساتوں سیٹوں پر انتخاب لڑے گی اور دہلی میں بی جے پی کو شکست دیکر تمام سیٹوں پر فتح حاصل کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اروند کیجریوال اور ان کی پارٹی بھرم پھیلانے اور جھوٹ بولنے میں ماہر ہے۔ موجودہ دہلی حکومت کو اگر جھوٹوں کی حکومت کہا جائے تو کوئی تضاد نہ ہوگا۔ سچ تو یہ ہے کہ عام آدمی پارٹی اور بی جے پی پس پردہ آپس میں ملی ہوئی ہیں اور دہلی کے عوام کو دھوکہ دیتے ہوئے آپس میں نورا کشتی کر رہی ہیں۔ کیجریوال عوام کو گمراہ کر رہے ہیں کہ پارلیمانی انتخابات میں عام آدمی پارٹی اور کانگریس میں اتحاد کرکے دہلی میں الیکشن لڑیں گے، لیکن میں صاف کر دینا چاہتی ہوں کہ کا نگریس اکیلے الیکشن لڑے گی۔

دہلی کانگریس کی صدر شیلا دکشت آج مہرولی ضلع کانگریس کمیٹی اور بدرپور ضلع کانگریس کمیٹی کی جانب سے اپنے اپنے علاقوں میں منعقدہ کارکنان کانفرنس سے خطاب کر رہی تھیں۔ شیلا دکشت نے کہا کہ کیجریوال دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دلانے کے لئے بھوک ہڑتال کی بات کرکے لوگوں کو بھٹکا رہے ہیں۔ جبکہ وہ جانتے ہیں کہ پارلیمنٹ کا اجلاس ختم ہو گیا ہے اور اب نئی حکومت بننے پر ہی نیا سیشن شروع ہوگا، تب ہی دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دینے کےلئے بل لایا جا سکتا ہے۔ لیکن کیجریوال جھوٹی واہ واہی کےلئے دہلی کے لوگوں میں بھرم پھیلا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں ان سے پوچھتی ہوں کہ چار سال پہلے انہوں نے یہ بھوک ہڑتال کیوں نہیں کی، صرف انتخابات کو دیکھ کر ہی انہیں اب دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دلانا کیوں یاد آ رہا ہے۔

مہرولی ضلع میں ڈسٹرکٹ صدر راجیش چوہان اور بدرپور میں ضلع صدروشنو اگروال نے کارکنان کانفرنس کا انعقاد کیا تھا۔ شیلا دکشت نے کہا کہ موجودہ دہلی حکومت ہر محاذ پر ناکام ہو چکی ہے، مگر پھر بھی روزانہ اخبارات میں پورے پورے صفحہ کے اشتہارات شائع کرکے اپنے جھوٹے دعووں اور وعدوں کو نشر کرنے میں لگی ہے۔ شیلا نے کہاکہ دہلی اب کیجریوال حکومت کی جھوٹے اشتہارات کی حکومت کے طور پر شناخت کی جا رہی ہے۔ دہلی والوں کے خون پسینے کی کمائی سے حاصل ٹیکس کے پیسوں سے اپنا اور اپنی پارٹی کی تشہیر کرنے میں مصروف ہے۔ کاش، اشتہارات پر خرچ کئے گئے کروڑوں روپے کا استعمال دہلی کی بہتری کے لئے کیا گیا ہوتا، تو دہلی کی بدحال حالت میں کچھ بہتری ضرور ہوتا، جھگی جھوپڑی، غیر مجاز کالونیوں میں ترقی کے کاموں کو اس پیسے سے رفتار فراہم کی جا سکتی تھی۔ مگر کیجریوال حکومت شروع سے ہی دہلی کے تئیں اپنی ذمہ داری اور جوابدہی سے بچتی رہی ہے۔ اس موقع پر ایگزیکٹو چیئرمین ہارون یوسف، راجیش للوٹھیا، سابق ایم پی رمیش کمار، سبھاش چوپڑا، سابق وزیر ڈاکٹر یوگانند شاستری، رماکانت گوسوامی، ریاستی ترجمان جتیندر کمار کوچر، جگ پروےش کمار، اوم پرکاش بدھوڑی، سابق ممبر اسمبلی بلرام تنوروغیرہ سمیت دیگر عہدیدار اور کارکنان موجود تھے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close