تازہ ترین خبریںدلی نامہ

دہلی: ماسک نہ پہننے پر 2000 روپے کا جرمانہ، احکامات جاری

کیجریوال حکومت نے عوامی مقامات پر ماسک نہ پہننے والوں کے خلاف اب سخت کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور بغیر ماسک لگائے پکڑے جانے پر جرمانہ کی رقم چار گنا بڑھاکر دو ہزار روپے کردی ہے۔ جبکہ پہلے یہ جرمانہ پانچ سو روپے کا تھا۔

نئی دہلی، (یو این آئی)
دارالحکومت میں کورونا وائرس کے خطرناک شکل اختیار کرنے کے درمیان کیجریوال حکومت نے عوامی مقامات پر ماسک نہ پہننے والوں کے خلاف اب سخت کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور بغیر ماسک لگائے پکڑے جانے پر جرمانہ کی رقم چار گنا بڑھاکر دو ہزار روپے کردی ہے۔

وزیراعلی اروند کیجریوال نے جمعرات کو کورونا کی صورت حال سے نمٹنے کےلئے سبھی پارٹیوں کی میٹنگ کے بعد پریس کانفرنس میں یہ اعلان کیا۔ یاد رہے کہ پہلے یہ جرمانہ پانچ سو روپے کا تھا۔ مسٹرکیجریوال نے کہا کہ ابھی تک ماسک نہ پہنے جانے پر 500 روپے کا جرمانہ لگتا تھا، لیکن کئی لوگ ابھی بھی ماسک کے بغیر گھوم رہے ہیں، ایسے لوگوں پر سخت کارروائی کے لئے جرمانے کی رقم کو بڑھا کر دو ہزار روپے کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ دہلی میں کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے اور بدھ کو اعدادو شمار میں ریکارڈ 131 مریضوں کی موت ہوگئی ہے۔

کورونا کے سلسلے میں سیاسی پارٹیوں سے سیاست نہ کرنے کی اپیل کرتے ہوئے مسٹر کیجریوال نے کہا،’’ہم چاہتے ہیں کہ لوگ دھوم دھام سے چھٹھ کا تہوار منائیں، لیکن عوامی مقامات پر چھٹھ نہ منائیں۔ کئی ریاستی حکومت نے بھی عوام مقامات پر اسے منانے پر پابندی لگائی ہے۔ ہم بھی چاہتے ہیں کہ کورونا نہ پھیلے، اس لئے آپ لوگوں سے اپیل ہے کہ چھٹھ کو گھر پر ہی منائیں۔‘‘

مسٹر کیجریوال نے کہا کہ سبھی پارٹیوں کی میٹنگ میں انہوں نے کہا کہ دہلی میں کورونا کا انفیکشن تیزی سے پھیل رہا ہے اور یہ دارالحکومت کے لوگوں کےلئے بہت مشکل وقت ہے۔ یہ سیاست کرنے کا وقت نہیں ہے۔ سیاست کرنے کےلئے پوری زندگی ہے۔‘‘وزیراعلی نے کہا کہ ہمیں کچھ دنوں کے لئے سیاست کو درکنار کرکے دہلی کے لوگوں کو اس وبا سے بچانے کےلئے بے لوث خدمات انجام دینی ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ میٹنگ میں سبھی پارٹیاں اس بات پر متفق تھیں کہ یہ وقت سبھی کو ایک ہوکر دہلی کے لوگوں کی خدمت کرنے کا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چھٹھ تہوار کو عوامی مقامات پر منانے کی مناہی ہے۔عوامی مقامات پر تہوار منانے سے کورونا پھیلا تو تصور کیجئے کہ کیا حالت ہوگی۔ اس لئے گھروں میں رہکر ہی محفوظ طریقے سے تہوار منائیں۔ماہرین کی بھی رائے ہے کہ چھٹھ تہوار عوامی مقامات پر نہیں منائے جانے چاہئے۔

مسٹر کیجریوال نے کہا کہ دہلی کے سبھی پرائیویٹ اسپتالوں کے 80 فیصد بیڈ کورونا کےلئے ریزرو کئے جارہے ہیں۔ سبھی غیر سنجیدہ قسم کے پہلے سے طے آپریشنوں کو فی الحال ٹالنے کےلئے کہا گیا ہے۔ حکومت 663 آئی سی یو بیڈ کا مزید انتظام کررہی ہے، مرکزی حکومت 750 آئی سی یو بیڈ کا انتظام کررہی ہے۔ اس طرح کل ملاکر 1400 سے زیادہ آئی سی یو بیڈ اور ہوجائیں گے۔ کانگریس نے میٹنگ میں بازاروں کو بند کرنے کی مخالفت کی ہے۔کانگریس نے عوامی طورپر چھٹھ پر پابندی نہ لگانے کےلئے دہلی حکومت کو ایک خط بھی دیا۔ بی جے پی نے بد نظامی اور بیڈ کی تعداد میں اضافے کا معاملہ اٹھایا۔ کانگریس نے عوامی طورپر چھٹھ پر پابندی نہ لگانے کےلئے دہلی حکومت کو خط بھی دیا ہے۔

واضح رہے کہ کورونا کی خطرناک صورت حال کے پیش نظر دہلی حکومت نے شادی کی تقریبات میں شرکت کرنے والوں کی تعداد 50 تک محدود کردی ہے۔ پہلے اسے بڑھاکر 200 کردیا گیا تھا۔

نیوز ایجنسی (یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close