اپنا دیشتازہ ترین خبریں

دہلی حکومت کی لاپرواہی سے نربھیا مجرموں کی پھانسی میں ہورہی ہے تاخیر: جاوڈیکر

مرکز نے نربھیا اجتماعی آبروریزی وقتل معاملے میں مجرموں کی پھانسی میں ہو رہی تاخیر کیلئے دہلی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے کہاکہ دہلی حکومت کی لاپرواہی کی وجہ سے انصاف میں تاخیر ہو رہی ہے۔ انصاف میں تاخیر کیلئے اے اے پی ذمہ دار ہے۔ جاوڈیکر نے پوچھا کہ کیوں کیجریوال حکومت نے ڈھائی سالوں میں رحم کی عرضی داخل کرنے کیلئے مجرموں کو نوٹس نہیں دیا۔ سینئر پارٹی لیڈر اور مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے صحافیوں کو بتایا کہ اگر عام آدمی پارٹی نے سپریم کورٹ کے حکم کے ایک ہفتے کے اندر تمام مجرموں کو نوٹس دے دیا ہوتا تو اب تک انہیں پھانسی دے دی جاتی اور ملک کو انصاف مل جاتا۔

بدھ کے روز دہلی حکومت اور تہاڑ جیل حکومت نے جسٹس منموہن اور سنگیتا ڈھینگرا سہگل کی ایک بینچ کو بتایا کہ جیل قواعد کے تحت اگر کسی معاملے میں ایک زائد افراد کو موت کی سزا دی جاتی ہے اور اگر ان میں سے کئی رحم کی عرضی داخل کرتا ہے تو دیگر افراد کی پھانسی، اس عرضی پر فیصلہ آنے تک ملتوی کر دیا جاتا۔ بدھ کے روز اروند کیجریوال کی قیادت والی دہلی حکومت نے مجرموں میں سے ایک مکیش کی رحم کی عرضی کو مسترد کردیا تھا۔ اس کے بعد رحم کی عرضی کو لیفٹیننٹ گورنر کو بھیجا گیا جس کواب داخلی امور کی وزارت کو بھیج دیا گیا ہے۔

قابل غور ہے کہ16 دسمبر 2012 کی نصف شب میں قومی خطے میں ایک چلتی بس میں 23 سالہ خاتون کی عصمت دری وقتل کے مجرموں کو پھانسی کی سزا سنائی گئی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close