تازہ ترین خبریںدلی نامہ

دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی میں کم پڑ سکتے ہیں عازمین کو لگنے والی ویکسن

دہلی اور بیرون دہلی کے پرائیوٹ ٹور آپریٹرس سمیت دیگر ریاستوں کے بھی عازمین دہلی آ رہے ہیں ٹیکے لگوانے، دہلی کو ملنا چاہئے ویکسن کا ایڈیشنل کوٹہ، مرکزی وزارت اقلیتی امور کی توجہ کی اشد ضرورت،

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
دہلی امبارکیشن سے حج پروازیں اختتام پزیر ہونے کے باوجود بھی دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی میں عازمین کو لازم لگنے والے ویکسن لگائے جانے اور ان کو میڈیکل کارڈ دینے کا عمل جا ری ہے۔ لیکن جس کثیر تعداد میں دہلی اور بیرون دہلی کے پرائیوٹ ٹور آپریٹرس کے ذریعہ اور مختلف ریاستوں کے عازمین دہلی حج کمیٹی میں ویکسن لگوانے آ رہے ہیں اس کو دیکھتے ہوئے حکومت کی جانب سے دہلی حج کمیٹی کو فراہم کی گئی ویکسن کی شارٹیج ہونا لازم ہے۔ جبکہ حج کمیٹی آف انڈیا کی جانب سے دیئے گئے کتابی شکل کے میڈیکل اسٹیٹس کارڈ تقریباً ختم ہو چکے ہیں اور پرائیوٹ ٹور سے جانے والے عازمین کی مسلسل آمد جاری ہے۔

واضح رہے دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی کے دفتر حج منزل میں جاری ویکسنیشن کے عمل کا روز نامہ ’سچ کی آواز‘ کے جائزہ لینے پر یہ انکشاف بھی ہوا کہ پرائیوٹ ٹور آپریٹرس جو عازمین سے چار سے پانچ لاکھ کی موٹی رقم حج کرانے کے عوض وصول کرتے ہیں، وہ عازمین کو اپنے پاس سے ویکسن لگوانا تو دور، ان کو میڈیکل کارڈ تک نہیں دے رہے ہیں، عازمین یہ کارڈ بھی دہلی حج کمیٹی سے حاصل کر رہے ہیں۔ لیکن کب تک؟ دہلی حج کمیٹی کے پاس بھی اب میڈکل کارڈ ختم ہو چلے ہیں۔ حج کمیٹی آف انڈیا نے 3ہزار میڈیکل کارڈ دہلی حج کمیٹی کو دیئے تھے۔ جو اب ختم ہو چلے ہیں۔ جبکہ ویکسن کی شارٹیج کے قوی امکانات ہیں۔

بتا دیں کہ اس سال حج مشن 2019 کے آغاز پرحاجیوں کو لگائی جانے والی ویکسن تاخیر سے جاری کی گئیں، جس کی وجہ سے دیگر ریاستوں کے عازمین ٹیکے لگوانے کیلئے پریشان بھٹکتے رہے، لیکن چونکہ دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی میں گزشتہ کی بقایا ویکسن دہلی حکومت کے اسٹور میں سیف رکھی ہونے کے سبب دہلی میں اپنے مقررہ وقت پر ویکسن لگانے کا عمل شروع ہو گیا تھا اس لئے یہاں حالات خراب نہیں ہو سکے۔ لیکن دہلی امبارکیشن پوائنٹ سے روانہ ہونے والے دہلی اور دیگر ریاستوں کے 22551 عازمین حج سمیت سرکاری ڈیپوٹیشن پر جانے والے افراد کو تو ٹیکے لگے ہیں وہیں دیگر ریاستوں یہاں تک کے بہار، اڑیسہ تک کے عازمین نے ٹیکے لگوائے ہیں۔

جبکہ اب پرائیوٹ ٹورس آپریٹرس کے ذریعہ جانے والے عازمین ٹیکے لگوانے ا ٓرہے ہیں۔ دہلی حج کمیٹی کو پہلے 2548 ویکسن دیئے گئے تھے اور بعد میں اب ایڈشنل کوٹہ میں محض 800 ویکسن ملی ہیں، جبکہ دہلی کی گزشتہ سال کی اسٹور میں رکھی ہوئی بقایا 1390 ویکسن بھی استعمال ہو چکی ہیں، ان تمام کو جوڑا جائے تو کل 4738 ویکسن ہوتی ہیں۔ وہیں آج تک دہلی حج کمیٹی میں 4400 ویکسن لگ چکے ہیں۔ اب محض تقریبا ًسوا تین سو ہی ویکسن دہلی حج کمیٹی کے پاس بچی ہیں جبکہ دہلی اور بیرون دہلی کے پرائیوٹ ٹور آپریٹرس سے جانے والے عازمین ویکسن لگوانے مسلسل آ رہے ہیں، جس کو دیکھ کر لگتا ہے کہ ایک دو دن میں دہلی حج کمیٹی کے پاس ویکسن ختم ہو جائیں گی۔

یاد رہے کہ 6 اگست کو ہندوستان سے آخری حج پرواز روانہ ہو گی، لیکن دہلی میں ابھی مختلف سفارت خانوں، وزارت اور ڈیپوٹیشن پر جانے والے لوگ ٹیکے لگوانے آ رہے ہیں اور وزیراعظم کے خیر سگالی وفد کے لوگ بھی ٹیکے لگوانے آنے ہیں ان کو میڈیکل کے کارڈ بھی دیئے جانے ہیں لیکن ویکسن اور کاڑڈ ختم ہو رہے ہیں۔ جس پر حکومت کو توجہ دینے کی اشد ضرورت ہے۔ بتا دیں کہ دہلی کو 800 ویکسن کا ایڈشنل کوٹہ دیا گیا ہے اس کے ساتھ ساتھ دیگر ریاستوں اترا کھنڈ کو 200، ہریانہ 200 اور اتر پردیش کو 17141 ویکسن کا ایڈشنل کوٹہ دیا گیا ہے۔

یہاں یہ قابل ذکر ہے کہ ہریانہ اور اترا کھنڈ کے عازمین جا چکے ہیں جبکہ یوپی میں ابھی حج پروازیں جاری ہیں۔ یہ ایڈشنل کوٹہ جہاں پر ویکسن کی ضرورت نہیں ہے اور یہ ایڈشنل کوٹہ استعمال نہیں ہو رہا ہے وہ دہلی حج کمیٹی کو جلد سے جلد دیا جانا چاہئے تاکہ یہاں آنے والے عازمین کو ٹیکے لگ سکتے ہیں۔ جس پر مرکزی وزارت اقلیتی امور کو توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ دہلی حج کمیٹی میں اگر ویکسن بچتی ہیں تو یہ بقایا ویکسن سیف کسٹڈی میں دہلی حکومت کے بڑے کولڈ اسٹور میں محفوظ رکھوا دی جاتی ہیں تاکہ یہ آئندہ سال استعمال میں آ سکیں۔ لیکن اگر دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی کو مزید ویکسن نہیں دی گئیں تو ٹیکے لگنے کا عمل بند کیا جائے گا اور جس ریاست میں حج پروازیں جا رہی ہوں گی وہاں جاکر عازمین کو ٹیکے لگوانے پڑیں گے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close