تازہ ترین خبریںکھیل کھلاڑی

دھونی کو ٹریننگ کیلئے آرمی چیف راوت سے ملی اجازت

ہندستانی وکٹ کیپر بلے باز مہندر سنگھ دھونی کو ٹیریٹورییل آرمی (ٹی اے) کی پیراشوٹ ریجمنٹ میں دو ماہ کی ٹریننگ کرنے کے لیے فوج کے سربراہ جنرل بپن راوت سے اجازت مل گئی ہے۔ دھونی ٹی اے کی پیراشوٹ ریجمنٹ میں اعزازی لیفٹیننٹ کرنل کے عہدے پر تعینات ہیں اور وہ فوج کے ساتھ ٹریننگ کرنا چاہتے ہیں۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق دھونی نے سیاچن میں ٹریننگ کی خواہش ظاہر کی تھی، دو ماہ تک چلنے والی ان کی ٹریننگ میں کچھ وقت وہ وادی کشمیر میں بھی گزاریں گے۔

ہندستان کے عالمی کپ فاتح کپتان کو اگرچہ ٹریننگ کے دوران فوج کے کسی بھی فعال آپریشن میں حصہ لینے کی اجازت نہیں ملی ہے۔ دھونی نے حال ہی میں ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) سے دو ماہ کی چھٹی لی ہے اور اگلے ماہ ہونے والے ویسٹ انڈیز کے دورے سے خود کو الگ کر لیا تھا۔ دھونی کے اس دورے میں منتخب ہونے پر ہی سب سے زیادہ بحث ہوئی تھی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق دھونی دیگر جوانوں کے ساتھ ٹریننگ کریں گے اور دو ماہ کے دوران دیگر فوجیوں کی طرح ہی رہیں گے۔ فوج کی پیراشوٹ ریجمنٹ کا ہیڈکوارٹر بنگلور میں واقع ہے اور فی الحال اس کی تعیناتی وادی میں ہے۔

قابل ذکر ہے کہ دھونی سال 2015 میں ماہر پیراشوٹ فوجی بنے تھے۔ انہوں نے اس کے لیے آگرہ کے ٹریننگ کیمپ میں فوج کے طیارے سے پانچ پیراشوٹ ٹریننگ چھلانگ لگائی تھی۔ سابق کپتان کو سال 2011 میں لیفٹیننٹ کرنل کے اعزازی عہدے سے نوازا گیا تھا جو ٹی اے کی 106 انفینٹری بٹالین کا حصہ ہے۔ فوج کی پیراشوٹ ریجمنٹ کی دو بٹالین میں سے یہ ایک ہے۔

آئی سی سی ورلڈ کپ کے بعد سے ہی دھونی کے ریٹائرمنٹ کو لے کر قیاس آرائی کی جا رہی تھیں لیکن انہوں نے کرکٹ میں اپنے مستقبل کو لے کر کچھ نہیں کہا جس سے ان کے قومی ٹیم میں انتخاب کے تعلق سے غیر یقینی صورت حال پیدا ہو گئی۔ اس کے بعد چیف سلیکٹر ایم ایس کے پرساد نے بھی ان کے ٹیم میں منتخب نہیں ہونے کی بات کہی تھی۔ لیکن تین اگست سے شروع ہونے والے ویسٹ انڈیز کے دورے کے لیے دھونی نے خود ہی اپنی عدم دستیابی ظاہر کردی۔

ممبئی میں اتوار کو ہندستانی ٹیم کا ویسٹ انڈیز دورے کے لیے انتخاب کیا گیا تھا جس میں پرساد نے دھونی کے محدود اوور سیریز میں دستیاب نہیں رہنے کی تصدیق کی اور تینوں فارمیٹس میں مستقبل میں نوجوان وکٹ کیپر رشبھ پنت کو موقع دیئے جانے کے اشارہ دیئے۔ اگرچہ یہ صاف نہیں ہے کہ دھونی کی آگے کیا مصروفیات رہتی ہیں اور وہ اگلے سال نیوزی لینڈ اور جنوبی افریقہ کے ساتھ ٹوئنٹی 20 سریز اور آئی پی ایل میں حصہ لیتے ہیں یا نہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close