اترپردیشتازہ ترین خبریں

دس دن سے دھرنے پر بیٹھے کسانوں نے کیا ” جوتا پوجا”، درج کرایا انوکھا احتجاج

اتر پردیش کے ضلع جھانسی میں اپنے مختلف مطالبات کے سلسلے میں دس دنوں سے دھرنے پر بیٹھے کسانوں نے جمعہ کو وجے دشمی کے موقع پر ہتھیاروں کے مقام پر جوتوں کو کسانوں کا سب سے بڑا سرمایہ بتاتے ہوئے ’’ جوتا پوجا‘‘ کی۔

کچہری چوک کے پاس گاندھی پارک میں دھرنے پر بیٹھے کسانوں نے نیتا بندیل کھنڈ کسان پنچایت کے صدر گوری شنکر بدووا نے کہا’’ کسان ابھی پر امن طریقے سے انتظار کر رہے ہیں کہ انتظامیہ اور حکومت ہمارے مطالبات پر دھیان دیں۔ کیونکہ کسانوں کے مطالبات کو پورا کرنے کے لئے ہم نے وقت کا جو الٹی میٹم دیا ہے وہ ابھی پورا نہیں ہوا ہے۔ دسہرے کے اس اہم موقع پر ہم نے اور ہمارے ساتھیوں نے جوتے کی پوجا کی ہے‘‘۔

انہوں نے کہا کہ’’ ہمارے پاس ہتھیار تو نہیں ہیں،ہم اتنی استطاعت بھی نہیں رکھتے ہیں لیکن ہمارے پاس جوتا ضرور ہے۔ ہم جوتے پہن کر کہیں جاتے ہیں اور جب اس کی ضرورت ہوتی ہے تو چلاتے بھی ہیں۔یہ ہمار سب سے بڑا ہتھیار ہے اس لئے ہم نے آج اسی کی پوجا کی ہے۔ آج ہم نے اپنے جوتے جو سرکاری دفاتر کے چکر لگاتے لگاتے گھس گئے ہیں ان سبھی کو سلوا کر ،ان کی مرمت کراکے ان کی پوجا کی ہے‘‘۔ کسان لیڈر نے کہا کہ اگر کسانوں کے مطالبات پر دھیان نہیں دیا گیا تو کسان جوتا چلانے پر مجبور ہوجائیں گے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close