تازہ ترین خبریںکھیل کھلاڑی

خواتین ٹی-20 ورلڈکپ: ٹیم انڈیا نے آسٹریلیا کو 17 رن سے دی شکست

ہندوستانی کرکٹ ٹیم نے بین الاقوامی ٹی-20 عالمی کپ کرکٹ کے اپنے پہلے مقابلے میں آسٹریلیا کو 17 رنوں سے شکست دے دی۔ آسٹریلیائی ٹیم کے سامنے ہندوستان نے 133 رنوں کا ہدف دیا تھا لیکن پوری ٹیم 115 رن پر آؤٹ ہوگئی۔ لیگ اسپنر پونم یادو(19 رن پر چار وکٹ) اور تیز گیند باز شکھا پانڈے (14 رن پر تین وکٹ) کی شاندار گیند بازی کی بدولت ہندوستان نے پہلے مقابلے میںشاندار جیت درج کی ہے۔

ہندوستانی خواتین ٹیم نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے دپتی شرما کی 46 گیندوں میں تین چوکوں کی مدد سے ناٹ آؤٹ 49 رن کی اننگز کی بدولت 20 اوور میں چار وکٹ پر 132 رن بنائے جس کے جواب میں میزبان آسٹریلیا کی ٹیم 19.5 اوور میں 115 رن ہی بنا سکی۔ ہندوستان کی جانب سے پونم اور شکھا نے بہترین گیند بازی کرکے آسٹریلیائی ٹیم کو باندھے رکھا اور ٹورنامنٹ کی شروعات جیت سے کی۔ آسٹریلیا کی طرف سے ایلیسا ہولی نے 35 گیندوں میں چھ چوکے اور ایک چھکے کی مدد سے سب سے زیادہ 51 رن بنائے۔ لیکن ان کی نصف سنچری آسٹریلیا کو جیت نہیں دلا سکی۔ آسٹریلیا کی اننگز میں ہولی کے علاوہ ایشرے گارڈنر نے 34 رن، بیتھ مینو نے 6، راچیل ہینس نے 6، کپتان میگ لیننگا نے 5، اور ڈیلیسا کمنس نے چار رن بنائے۔

یاد رہے کہ ہندوستان کی جانب سے پونم نے چار اوور میں 19 رن دے کر چار وکٹ لئے۔ شکھا نے 3.5 اوور میں 14 رن دے کر تین وکٹ اور راجیشوری گائیکواڈ نے چار اوور میں 31 رن دے کر ایک وکٹ لیا۔

ہدف کا تعاقب کرنے اتری آسٹریلیا ٹیم کو شکھا نے موني کو آؤٹ کر اس کو پہلا جھٹکا دیا۔ موتھ کے بعد مینگ لیننگ نئے بلے باز کی حیثیت سے کریز پر اتریں لیکن کوئی کرشمہ نہیں کر سکیں۔ لیننگ کو گایکواڈنے تانیہ بھاٹیہ کے ہاتھوں کیچ کراکر آؤٹ کیا۔ابتدائی جھٹکوں کے درمیان ہیلی نے اپنی اننگز کو آگے بڑھایا اور شاندار نصف سنچری لگائی۔ اگرچہ ہیلی اپنی اس اننگز کو آگے نہیں بڑھا سکیں اور پونم کا شکار بنیں۔ ہیلی کے آؤٹ ہونے کے بعد آسٹریلیائی اننگز لڑکھڑاگئی۔ اس دوران گارڈنر نے بہترین شاٹ کھیل آسٹریلیا کی امیدوں کو روشن رکھا۔

گارڈنر کا وکٹ شکھا نے لیا اور آسٹریلیا کی آخری امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ گارڈنر میں 36 گیندوں میں 34 رن کی اننگز میں تین چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ ہیلی اور گارڈنر کے علاوہ آسٹریلیا کی کوئی بھی بلے باز کرشمہ نہیں کر سکی لہذا اس ٹورنامنٹ کے پہلے میچ میں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ پونم کو ان کی شاندار بولنگ کے لئے پلیئر آف دی میچ کا ایوارڈ ملا۔اس سے پہلے ٹاس ہار کر پہلے بلے بازی کرنے اتری ہندستانی ٹیم کو اوپنر شیفالي ورما اور سمرتی مندھانا نے اچھی شروعات دلائی اور دونوں کے درمیان پہلی وکٹ کے لئے 41 رن کی ساجھےداری ہوئی۔ اگرچہ یہ ساجھیداري اور بڑی ہوتی اس سے پہلے ہی جیس جوناسن نے ایل بی ڈبلیو کر مندھانا کو آؤٹ کر دیا۔

مندھانا نے 11 گیندوں میں 10 رن کی اننگز میں دو چوکے لگائے۔ مندھانا کے بعد شیفالي بھی زیادہ دیر کریز پر نہیں ٹک سکیں اورا یلسا پیری کی گیند پر انابیل سدرلینڈ کو کیچ تھما بیٹھیں۔ شیفالي نے 15 گیندوں میں پانچ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 29 رن بنائے۔ نئے بلے باز کے طور پر میدان پر اتری کپتان هرمنپريت کور اپنا جلوہ نہیں بکھیر سکیں اور صرف دو رنز بنا کر پویلین لوٹ گئیں۔ اس کے بعد جمیماروڈرگز نے دپتی کے ساتھ مل کر ہندوستانی اننگز کو آگے بڑھایا اور دونوں کے درمیان چوتھے وکٹ لئے 53 رنز کی محض ایک بڑی شراکت ہوئی۔ روڈرگز کا وکٹ كمنس نے لیا۔ روڈرگز نے 33 گیندوں پر 26 رن بنائے۔ روڈرگز کے آؤٹ ہونے کے بعد دپتی نے ویدا کرشنا مورتی کے ساتھ ہندستانی اننگز کو آگے بڑھایا۔ كرشنامورتی نو رن بنا کر ناٹ آؤٹ رہیں۔آسٹریلیا کی جانب سے جوناسن نے چار اوور میں 24 رن دے کر دو وکٹ لئے جبکہ پیری نے تین اوور میں 15 رن اور كمنس نے چار اوور میں 24 رن دے کر ایک ایک وکٹ لیا۔ہندستان کا اگلا مقابلہ بنگلہ دیش سے 24 فروری کو پرتھ میں ہوگا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close