تازہ ترین خبریںمسلم دنیا

خالدہ ضیاء کی سزا میں پانچ سال کا اضافہ، سزا کے خلاف پارٹی کا ملک گیردھرنا ومظاہرہ

ڈھاکہ ہائی کورٹ نے ’ضیاء اورفینیج (یتیم خانہ )ٹرسٹ‘ غبن معاملے میں بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی (بی این پی) کی سربراہ خالدہ ضیاء کی سزا میں پانچ سال کا اضافہ کرکے اسے10سال کردیا ہے۔

جسٹس ایم عنایت الرحیم اور جسٹس محمد مستفیض الرحمٰن نے انسداد بدعنوانی کمیشن کے ذریعہ محترمہ ضیاء کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کئے جانے کے مطالبے کے سلسلے میں دائر عرضی پر سماعت کے بعد یہ فیصلہ کیا۔ ہائی کورٹ نے محترمہ ضیاء کی جانب سے انہیں بری کئے جانے سے متعلق ان کے وکیل کی اپیل نا منظور کردی۔

بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی (بی این پی) اپنی صدر اور ملک کی سابق وزیر اعظم خالدہ ضیاکو بدعنوانی کے ایک معاملہ میں سات سال قید کی سزا سنائے جانے کے خلاف منگل کو ملک بھر میں احتجاجی مظاہرہ کرے گی۔ بی این پی کے جنرل سکریٹری مرزا فخرالاسلام عالمگیر نے پیر کو یہاں بي این پی نیا پلٹن کے مرکزی دفتر پر منعقد پریس کانفرنس میں اس کا اعلان کیا۔ مسٹر عالمگیر نے کہا دھرنا و مظاہرہ کا پروگرام تمام اضلاع، شہروں اور میٹروپولیٹن شہر میں کیا جائے گا۔

مسٹر عالمگیر نے کہا کہ محترمہ ضیا کو حکومت کے اشارے پر غیر قانونی طور پر مجرم قرار دیتے ہوئے سزا سنائی گئی ہے تاکہ ان کو آنے والے عام انتخابات میں سیاست سے دور رکھا جا سکے۔ انہوں نے کہا اس کیس میں محترمہ ضیا کو انصاف نہیں ملا۔ قابل غور ہے کہ ڈھاکہ کی ایک مقامی عدالت نے پیر کو محترمہ خالدہ ضیا اور تین دیگر کو ضیا چیریٹیبل ٹرسٹ میں بدعنوانی کے الزام میں سات سال کی قید بامشقت کی قید کی سزا سنائی ہے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close