اپنا دیشتازہ ترین خبریں

حیدرآباد انکاؤنٹر کی تفتیش سے متعلق درخواست پر سپریم کورٹ کی سماعت بدھ کو

نئی دہلی، 09 دسمبر (ہ س)۔ سپریم کورٹ حیدرآباد گینگ ریپ-قتل کیملزمین کے انکاؤنٹر کی تحقیقات کا مطالبہ کرنے والی عرضی پر 11 دسمبر کو سماعت کرے گا۔عرضی میں تصادم میں شامل پولیس اہلکاروں اور کمشنر وی سیسجنار پر ایف آئی آر درج کرکے منصفانہ جانچ کی مانگ کی گئی ہے۔عرضی میں پولیس کی کارروائی کو مشکوک اور طے شدہ قوانین کے خلاف بتایا گیا ہے۔
اس معاملے میں سپریم کورٹ میں تین عرضیاں دائر کی گئی ہیں۔ تینوں عرضیاں وکلاء نے ہی دائر کی ہے۔ سپریم کورٹ کے وکیل پردیپ کمار یادو،جی ایس منی اور وکیل منوہرلال شرما نے عرضی دائر کی ہے۔ عرضی میں پورے معاملے کی جانچ کی مانگ کی گئی ہے۔ ساتھ ہی قصوروار پولیس والوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔
وکیل منوہرلال شرما نے درخواست دائر کرکے مطالبہ کیا ہے کہ راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ سنجے سنگھ، جیا بچن اور دہلی خواتین کمیشن کی صدر سواتی مالیوال کے بیانات سے انکاؤنٹر کی کارروائیمیں اضافہ ہوا ہے۔ منوہرلال شرما نے مطالبہ کیا ہے کہ ریپ کے ملزمین کو جب تک مجرم نہیں ٹھہرا دیا جاتا تب تک ٹی وی چینلز پر کوئی پروگرام یا بحث چلانے پر روک لگانے کے لئے ہدایات جاری کیجائیں۔
وکیل گ منی اور پردیپ کمار یادو نے اپنی درخواست میں کہا ہے کہ حیدرآباد انکاؤنٹر میں سپریم کورٹ کے 2014 کے احکامات کی تعمیل نہیں کی گئی۔ عرضی میں حیدرآباد کے پولیس کمشنر وی سی سجنار کے خلاف تحقیقات کی مانگ کی گئی ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ پولیس کی کارروائی طے شدہ قوانین کے خلاف ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ انکاؤنٹر کی غیر جانبدارانہ جانچ کی ضرورت ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close