اپنا دیشتازہ ترین خبریں

حکومت کو راجیہ سبھا میں تین طلاق پر پابندی سے متعلق بل کے منظور ہونے کی امید

مرکزی وزیرقانون روی شنکر پرساد نے مسلم خواتین کو انصاف دلانے کے معاملہ میں سیاست نہ کرنے کی اپیل کرتے ہوئے آج امید ظاہر کی کہ اسے راجیہ سبھا میں منظور کرنے کےلیے سبھی پارٹیوں کا تعاون ملے گا۔

لوک سبھا نے طلاق بدعت یا ایک مرتبہ میں تین طلاق کو غیر قانونی بنانے اور ایسا کرنے پر تین سال کی قید اور جرمانے والے مسلم خواتین (شادی کے حق کے تحفظ ) بل،2018منظور کردیا ہے۔ اب اسے راجیہ سبھا میں پیش کیاجائیگا۔ مسٹر پرساد نے جمعہ کو یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ تین طلاق سے متعلق بل سیاسی مخالفت ہورہی ہے جبکہ یہ خواتین کو انصاف دلانے کا بل ہے ۔انھوں نے کہاکہ اس پر ووٹ کی سیاست نہیں ہونی چاہئے۔

انھوں نے کہاکہ اسے مسلم خواتین کو انصاف دلانے کے طورپر دیکھاجاناچاہئے اور اس کا موازنہ دیگر مذاہب سے نہیں کیاجاسکتا۔ کیونکہ دیگر مذاہب میں تین طلاق جیسی رسم نہیں ہے۔ مرکزی وزیرنے کہاکہ لوک سبھا میں بھی کسی بھی پارٹی نے تین طلاق کی روایت کی حمایت نہیں کی اور اسے غلط بتایا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں مین انھوں نے کہا کہ راجیہ سبھا میں اسے منظور کرانے کے لیے حکومت کو سبھی پارٹیوں کا تعاون ملے گا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close